Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم تحفظات : موثر نمائندگی کیلئے نمونہ متن کی بدست جناب زاہد علی خاں اجرائی

مسلم تحفظات : موثر نمائندگی کیلئے نمونہ متن کی بدست جناب زاہد علی خاں اجرائی

تنظیموں اور ادارہ جات کے ذمہ داروں سے سرگرم ہوجانے کی اپیل ، قوم کا درخشاں مستقبل آپ کے ہاتھ

حیدرآباد ۔ 7 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ کے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کے لیے روزنامہ سیاست کی تحریک کا آج آغاز ہوگیا ۔ ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں نے آج تحریک کے متن اور شعور بیداری و نمائندگی میں آسانی کے لیے مکتوب نمائندگی کا نمونہ ( پروفارما ) جاری کیا تاکہ تمام مسلمانوں کی نمائندگی کا مقصد ایک ہو اور کسی قسم کی کوئی قانونی رکاوٹ پیدا نہ ہو ۔ یاد رہے کہ ادارہ روزنامہ سیاست کی قیادت میں جاری اس تحریک میں مسلم ایمپاورمنٹ مومنٹ کا اشتراک بھی شامل ہے ۔ ایڈیٹر سیاست نے آج تحریک کے لیے انتہائی اہمیت کے حامل مواد کو جو دو زمروں پر مشتمل کیا گیا ہے جاری کردیا اور اخبار سیاست کے صفحہ نمبر ( 8 ) پر بھی اس مواد متن کو شائع کیا گیا ہے تاکہ مسلمانوں کو تحریک میں نمائندگی کے لیے آسانی ہو ۔ مسلمانوں کو تعلیمی میدان اور روزگار کے مواقع فراہم کرنے میں برسوں سے سرگرم سیاست نے تحفظات کے وعدے میں تاخیر اور ملازمتوں کے اعلامیہ کی اجرائی پر تشویش ظاہر کی ہے اور جمہوری حق کے لیے مسلمانوں میں شعور بیدار کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ حکومت تلنگانہ نے ایک لاکھ 7 ہزار جائیدادوں پر بھرتی کا ارادہ کیا ہے اور فی الحال 15 ہزار ملازمتوں پر تقرر کے لیے اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے جس کے تحت 18 سو ملازمتیں مسلمانوں کو آنی چاہئے لیکن 12 فیصد کے بجائے اب صرف 4 فیصد کے تحت 6 سو ملازمتیں حاصل ہوں گی اور 1242 ملازمتوں کا نقصان ہورہا ہے ۔ ایڈیٹر سیاست کی جانب سے جاری کردہ مواد میں دو قسم کی نمائندگی کے لیے رہنمائی کی گئی ہے ۔ ایک سیاسی قائدین سے کی جانے والی نمائندگی کا مواد تو دوسرا سرکاری عہدیداروں سے کی جانے والی نمائندگی کا مواد شامل ہے ۔ اس مواد کی اجرائی کا اہم مقصد مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کو بغیر رکاوٹ یقینی بنانا ہے چونکہ جب ہماری نمائندگی میں ہی فرق اور اونچ نیچ رہی تو ہم اس عظیم موقع سے فائدہ اٹھانے میں ناکام رہ جائیں گے ۔ اس مواد کو لے کر اپنے اپنے لیٹر ہیڈ ، تنظیم ، کمیٹی ، مساجد کمیٹی ، دینی و ملی اداروں کے ذمہ داروں کو چاہئے کہ وہ بھی نمائندگی کریں ۔ منڈل سطح پر تحصیلدار ، ڈیویژن سطح پر آر ڈی او اور ضلعی سطح پر کلکٹر سے نمائندگیاں کی جانی چاہئے ۔ اس کے علاوہ دوسرے مواد میں جو سیاسی قائدین سے نمائندگی کے لیے جاری کیا جارہا ہے ۔ اس کی مدد سے سرپنچ ، منڈل پریسیڈنٹ ، ضلع پریشد رکن ، منڈل پریسڈنٹ ، ضلع پریشد چیرمین ، انچارج وزیر ، وزراء ، ارکان اسمبلی ، ارکان پارلیمنٹ ، وارڈ ممبر ، میونسپل کونسلر ، میونسپل چیرمین ، مئیر ، بلدیہ کے علاوہ علاقہ کے منتخب سیاسی قائدین کو بھی اپنی نمائندگی پیش کریں ۔ سیاست نے مسلمانوں سے خواہش کی کہ وہ قوم کے حق میں نوجوان نسل کے روشن مستقبل کے لیے چلائی جارہی تحریک میں فوری شامل ہوجائیں اور نمائندگی کے بعد تصاویر سیاست اور مسلم ایمپاورمنٹ کو مندرجہ ذیل ای میل اڈریس پر روانہ کریں ۔ سیاست نے مسلمانوں پر زور دے کر کہا کہ تحفظات کو بغیر قانونی رکاوٹ حاصل کرنے کے لیے بی سی کمیشن کی سفارش ضروری ہے اور بغیر بی سی کمیشن کی سفارش کے حکومت کی سفارش بھی بے اثر ثابت ہوگی اور عدالت میں تحفظات کو پھر چیالنج کیا جائے گا ۔ تاہم اس مرتبہ پورے ہوش حواس سے نمائندگی کی ضرورت ہے چونکہ اس موقع کے بعد دوبارہ 10 سال تک ایسا کوئی موقع آنے والا نہیں ہے اور بی سی کمیشن کی سفارش اور جلد از جلد 12 فیصد تحفظات پر عمل آوری کے لیے حکومت پر دباؤ ڈالا جائے چونکہ تلنگانہ میں 12.43 فیصد مسلم آبادی ہے اور اس آبادی کا 85 فیصد حصہ کمزور طبقات اور پسماندگی کا شکار ہے ۔ تحفظات نہ ہونے کے سبب مسلمانوں میں ترک تعلیم کا فیصد بڑھتا جارہا ہے اور ملازمتوں میںحصہ داری نہ ہونے کے سبب مسلمان دن بہ دن پسماندگی اور سطح غربت سے نیچے کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں ۔ سیاست نے مسلمانوں کو تحفظات کی تاخیر کے خوف سے تحریک کا آغاز کیا ہے نمائندگی کے بعد اس میل آئی ڈی [email protected] ۔ whatsapp:8712900055 پر تصاویر و مواد روانہ کریں ۔

TOPPOPULARRECENT