Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم تحفظات پر ادارہ سیاست کی تحریک قابل قدر ، چیف منسٹر کے سی آر نے وعدہ کو نبھایا

مسلم تحفظات پر ادارہ سیاست کی تحریک قابل قدر ، چیف منسٹر کے سی آر نے وعدہ کو نبھایا

یاد خسرو مشاعرہ ، جناب فاروق حسین کا خطاب ، شعراء کے کلام سے سامعین کی داد
حیدرآباد ۔ 17 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : خورشید احمد جامی میموریل اکیڈیمی کے زیر اہتمام یاد خسرو کل ہند مشاعرہ کے موقع پر شعراء نے حضرت امیر خسرو کی فروغ اردو میں کوششوں اور کاوشوں کے علاوہ ان کے کلام میں جو اثر انگیزی کو اپنے کلام کے ذریعہ سماج و معاشرہ کی سدھار کا اہم فریضہ انجام دیا ۔ اس کی یاد تازہ کی گئی اور حضرت امیر خسرو کا کلام ان ہی کی آوازمیں ( ٹیپ ) سنایا گیا ۔ شعراء و سامعین کا خیر مقدم جناب طارق خسرو نے کرتے ہوئے حضرت امیر خسرو کے اشعار پیش کیا ۔ اور کہا کہ کسی زبان کو اگر بلا لحاظ مذہب و ملت افراد کی سرپرستی و تائید حاصل ہو تو وہ زبان مقبول عام ہوجاتی ہے ۔ مشاعرہ کی صدارت جناب شجاعت علی جوائنٹ ڈائرکٹر دوردرشن چینائی نے کی ۔ مہمان خصوصی جناب فاروق حسین رکن قانون ساز کونسل نے شمع روشن کر کے مشاعرہ کا افتتاح انجام دیا ۔ جناب فاروق حسین نے اردو زبان کے فروغ اور اس کی بڑھتی ہوئی مقبولیت پر کہا کہ اس زبان کو جتنا دبانے کی کوشش کی گئی اس کو اتنا ہی فروغ حاصل ہوا ۔ اسمبلی میں مسلمانوں اور دیگر طبقات کے لیے تحفظات بل کی منظوری کے سی آر اور ان کی حکومت کو مبارکباد دی گئی ۔ انہوں نے جناب زاہد علی خاں ایڈیٹر روزنامہ سیاست اور جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر سیاست کی مسلسل 12 فیصد تحفظات کے لیے جوتگ و دو اور ریاست بھر میں تحریک کو فروغ حاصل ہوا جو قابل قدر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جناب زاہد علی خاں ایڈیٹر سیاست سے کے سی آر کی ملاقات 1986 میں عید ملاپ تقریب میں ہوئی تھی ۔ اسی وقت جناب زاہد علی خاں نے ان سے وعدہ کیا تھا کہ وہ 6 ماہ کے اندرون ہی اردو زبان پر عبور پیدا کروائیں گے ۔ جناب زاہد علی خاں کی دلچسپی کے باعث کے سی آر نے اردو سیکھی اور آج وہ روانی سے اردو زبان میں تقریر کرنے لگے ہیں ۔ اب تو معاملہ یہ ہے کہ چیف منسٹر حالات کی مناسبت سے اشعار کے ذریعہ طنز کرنے کا ہنر بھی جانتے ہیں ۔ ناظم مشاعرہ جناب سردار نے بہتر نظامت کی ۔ شعراء کرام طیب پاشاہ قادری ، رفیق جعفر ، نوری عزیز اور رعنا تبسم کو سامعین نے دوبارہ سنا ۔ مشاعرہ میں نانک سنگھ نشتر ، جگجیون لعل استھانہ سحر ، ڈاکٹر فاروق شکیل ، سردار سلیم ، سردار اثر ، محسن جلگانوی ، ثریا مہر ، ڈاکٹر سلیم عابدی ، ثمیہ خسرو ، کے کلام کو پسند کیا گیا ۔ ابتداء میں صدر مشاعرہ جناب شجاعت علی نے شعراء کا تعارف کروایا اور اس موقع پر مہمان شعراء کو گلدستے دئیے گئے ۔ اس موقع پر جناب نور الحق قادری ، جناب عابد صدیقی ، محمود قادری ، فرحت علی مقبول ، خواجہ کمال الدین ، منور علی مختصر اور مرد و خواتین کی کثیر تعداد موجود تھی ۔۔

TOPPOPULARRECENT