Friday , May 26 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم تحفظات پر کانگریس کی مکمل تائید و حمایت، چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کو تحفظات وعدہ پر عمل کا مشورہ : محمد علی شبیر

مسلم تحفظات پر کانگریس کی مکمل تائید و حمایت، چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کو تحفظات وعدہ پر عمل کا مشورہ : محمد علی شبیر

حیدرآباد ۔ 15 اپریل (سیاست نیوز) قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے مسلم تحفظات کی کانگریس کی جانب سے مکمل حمایت کرنے کا اعلان کرتے ہوئے چیف منسٹر کے سی آر کو دنیا کا آٹھواں عجوبہ اور ان کے فرزند کے ٹی آر کو سیاسی میدان کیلئے نومولود قرار دیا۔ مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو پر آر ایس ایس کے پرچارک کی حیثیت سے کام کرنے کا الزام عائد کیا۔ آج اسمبلی کے میڈیا ہال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد علی شبیر نے کہا کہ کے سی آر نے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے۔ اس پر مکمل عمل کریں یا کم از کم 10 فیصد مسلم تحفظات فراہم کریں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں 4 فیصد تحفظات مذہب کے نام پر نہیں بلکہ پسماندگی اور پیشہ کے اعتبار سے دیئے گئے سید، پٹھان، مغل، عرب، شیعہ اور ایرانی کو مسلم تحفظات سے محروم رکھا گیا ہے۔ پسماندہ مسلمانوں کو دیئے جانے والے تحفظات کو مذہب سے جوڑا جارہا ہے جبکہ بی جے پی گجرات میں خوشحال طبقہ کہلانے والے پٹیل ہریانہ میں جاٹ اور راجستھان میں گجر کو تحفظات دے رہی ہے اور اس کو ہندو مذہب سے ہرگز نہیں جوڑا جارہا ہے۔ بی جے پی کے سینئر قائد وینکیا نائیڈو مسلمانوں کو تحفظات فراہم کرنے پر تلنگانہ پاکستان بن جانے کا جو ریمارکس کیا ہے وہ قابل اعتراض ہے۔ وہ مرکزی وزیر کی حیثیت سے نہیں بلکہ آر ایس ایس کے پرچارک کی حیثیت سے بات کررہے ہیں۔ محمد علی شبیر نے ٹی آر ایس اور بی جے پی میچ فکسنگ ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ نوٹ بندی کے معاملے میں ٹی آر ایس نے وزیراعظم کی مکمل تائید و حمایت کی ہے۔ تلنگانہ میں پولیس اور آئی اے ایس آفیسرس کیلئے جتنے بھی گاڑیاں خریدی جارہی ہیں، سب وینکیا نائیڈو کے فرزند سے خریدی جارہی ہیں۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل نے ریاستی وزیر آئی ٹی و بلدی نظم و نسق کے ٹی آر کی جانب سے کانگریس کا ملک سے صفایا کرنے کا اعلان کرنے اور کانگریس کو بکواس جماعت قرار دینے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کے ٹی آر کانگریس کی 130 سالہ تاریخ کے مقابلے میں نومولود ہے۔ تلنگانہ کی تحریک میں ناخن نہ کاٹنے والے کے ٹی آر اپنے آپ کو شہیدوں میں شامل کرنے کی غلطی کررہے ہیں۔ کانگریس کی جانب سے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دینے کے ٹی آر وزیر بنے ہے۔ کے سی آر کا سیاسی جنم دینے والی کانگریس پارٹی پر تنقید کرنے کا کے ٹی آر کو اخلاقی حق بھی نہیں ہے۔ محمد علی شبیر نے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کو دنیا کا آٹھواں عجوبہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر امبیڈکر کی یوم پیدائش پر ان کے مجسمے پر گلہائے عقیدت پیش کرنا بھی چیف منسٹر نے مناسب نہیں سمجھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT