Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم طلباء کو سیول سرویس کوچنگ کا کل سے آغاز

مسلم طلباء کو سیول سرویس کوچنگ کا کل سے آغاز

کوچنگ کے لیے منتخب طلباء میں اڈمیشن کارڈ کی تقسیم کے لیے سکریٹریٹ میں تقریب مقرر
حیدرآباد۔/10جنوری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں مسلم طلبہ کو سیول سرویسیس کی کوچنگ کا جمعرات کو باقاعدہ آغاز ہوگا۔ اس سلسلہ میں ایک تقریب سکریٹریٹ میں منعقد کی جارہی ہے جس میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کوچنگ کیلئے منتخب طلبہ میں ایڈمیشن کارڈز تقسیم کریں گے۔ یوں تو مسلم طلبہ کو سیول سرویسیس کی کوچنگ کا سابق میں بھی اہتمام کیا جاتا رہا ہے تاہم سی ای ڈی ایم کے ذریعہ یہ کوچنگ دی گئی جس کے خاطر خواہ نتائج برآمد نہیں ہوئے۔ لہذا تلنگانہ حکومت نے خانگی کوچنگ سنٹرس میں مسلم امیدواروں کو اسپانسر کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ سیول سرویسیس میں مسلم نمائندگی میں اضافہ ہو۔ کوچنگ کے اخراجات حکومت برداشت کرے گی۔ گذشتہ سال اس اسکیم کا آغاز ہوا تھا لیکن کوچنگ سنٹرس کے انتخاب میں تاخیر کے سبب طلباء کو داخلہ نہیں مل سکا۔ جاریہ سال محکمہ اقلیتی بہبود نے 3 خانگی کوچنگ سنٹرس سے معاہدہ کیا ہے جہاں اقلیتی امیدواروں کو داخلہ دیا جائے گا۔ گزشتہ سال اسکریننگ ٹسٹ میں منتخب 42 طلبہ جاریہ سال کوچنگ میں شرکت کررہے ہیں جبکہ باقی 58 طلبہ کا تازہ اسکریننگ ٹسٹ کے ذریعہ انتخاب کیا گیا ہے۔ کوچنگ کے سلسلہ میں اہم رول ادا کرنے والے ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ کوچنگ کی افتتاحی تقریب میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کے علاوہ حکومت کے مشیر برائے اقلیتی اُمور اے کے خاں اور سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل شرکت کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ رسمی طور پر طلبہ میں ایڈمیشن کارڈز جاری کئے جائیں گے اور باقاعدہ کلاسیس کا آغاز 16جنوری سے ہوگا۔ طلبہ کو اپنی پسند کے کوچنگ سنٹرس کے انتخاب کا اختیار دیا گیا تھا اور ابھی تک 78 طلبہ نے اداروں کا انتخاب کرلیا ہے۔ اضلاع سے تعلق رکھنے والے طلبہ افتتاحی تقریب کے موقع پر کوچنگ سنٹرس کا انتخاب کرلیں گے۔ 100 طلبہ کو 3 مختلف اداروں میں سی سیٹ ( پریلیمس ) اور سیول سرویسیس مین کی کوچنگ دی جائے گی۔ تاحال 56 طلبہ نے آر سی ریڈی کوچنگ انسٹی ٹیوٹ کو اختیار کیا ہے جبکہ 17 نے برین ٹری اور 5 نے حیدرآباد اسٹڈی سرکل کا انتخاب کیا۔ عہدیداروں پر مشتمل سب کمیٹی نے کوچنگ میں حصہ لینے والے طلبہ کیلئے اسٹائیفنڈ میں اضافہ کی سفارش کی ہے۔ اضلاع سے تعلق رکھنے والے طلبہ کو سابق میں ماہانہ 1500 روپئے ادا کئے جاتے تھے تاہم کمیٹی نے ماہانہ 5000 روپئے کی سفارش کی ہے۔ شہر کے طلبہ کو صرف مفت بس پاس کی سہولت حاصل تھی لیکن کمیٹی نے ماہانہ 2500 روپئے کی سفارش کی ہے۔ اس کے علاوہ اسٹڈی میٹریل کیلئے ایک مرتبہ 3500 روپئے ادا کئے جائیں گے۔ اس تجویز کو حکومت کی منظوری باقی ہے۔ تینوں کوچنگ سنٹرس سے معاہدات کا عمل مکمل ہوچکا ہے اور ٹریننگ 9 ماہ کی مدت کی ہوگی۔ 100 منتخب طلبہ میں 27 لڑکیاں ہیں اور امیدکی جارہی ہے کہ خانگی کوچنگ سنٹرس میں سیول سرویسیس کوچنگ کے بعد تلنگانہ سے پہلی مرتبہ سیول سرویسیس کیلئے مسلم طلبہ منتخب ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT