Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم قبرستان کی اراضی سے کوکٹ پلی نالے کا راستہ

مسلم قبرستان کی اراضی سے کوکٹ پلی نالے کا راستہ

سرینواس یادو کی مساعی سے مسلمانوں میں ناراضگی ، مسلم قائدین کی معنیٰ خیز خاموشی
حیدرآباد ۔ 4 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : انتخابی وعدوں کی عمل آوری میں تاخیر تو دور شہر کے ایک علاقے بیگم پیٹ میں انتخابی وعدے کے عین خلاف مسلمانوں کی دل آزاری کا مبینہ اقدام جاری ہے ۔ کسی اپوزیشن جماعت یا پھر مخالف پارٹی کی جانب سے اس اقدام پر افسوس نہیں تھا ۔ تاہم مقامی مسلمانوں نے تلنگانہ راشٹرا سمیتی سے وابستہ قائدین کی لاپرواہی پر افسوس ظاہر کیا ہے اور اس مسلم قبرستان کو بچانے اور بے حرمتی سے پاک کرنے تمام قائدین ایک پلیٹ فام پر جمع ہوگئے ہیں ۔ بیگم پیٹ قبرستان کے متعلق رکن اسمبلی صنعت نگر و ریاستی وزیر سرینواس یادو کے اقدام پر مسلمانوں میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے ۔ بیگم پیٹ علاقہ کے مسلمان ایک لمبے عرصہ سے قبرستان اور اس کی اراضی کے تحفظ میں جدوجہد کررہے ہیں ۔ تاہم وقت کے ساتھ بدلتی حکومتیں اور سیاسی قائدین سوائے جذبات سے کھلواڑ اور احساسات کا مذاق اڑانے کے مسلمانوں کے حق میں کوئی ٹھوس اقدام کرنے سے گریز کررہے ہیں ۔ مقامی مسلمانوں نے کہا کہ رکن اسمبلی اگر اپوزیشن میں ہوتے تو سرکاری اقدامات میں رکاوٹ کے بہانے کو قبول کرلیا جاسکتا تھا ۔ تاہم اب تو وہ برسر اقتدار پارٹی سے تعلق رکھتے ہیں مقامی مسلمانوں نے سرینواس یادو پر مسلمانوں سے فریب کا الزام لگایا ہے ۔ اس موقع پر اپنے بیان میں کانگریس قائد محمد نصیر نے کہا کہ 2014 کے انتخابات میں سرینواس نے مسلمانوں کے قبرستان کے مسئلہ کو دوماہ میں حل کروانے کا دعویٰ کیا تھا اور اب اپنے وعدے اور دعویٰ کے خلاف مسلم قبرستان کی زمین میں سے کوکٹ پلی نالہ کو گذارنے کے اقدامات کیے جارہے ہیں ۔ کوکٹ پلی نالہ گندے پانی کا نالہ ہے ۔ اس کے سبب مسلم قبور کی بے حرمتی ہوگی ۔ اس موقع پر تلگو دیشم پارٹی سے وابستہ قائد محمد واحد نے کہا کہ مسلمانوں کے جذبات سے کھلواڑ کو تلگو دیشم پارٹی برداشت نہیں کرے گی ۔ انہوں نے سرکاری عہدیداروں اور انتظامیہ و حکومت پر ملی بھگت کا الزام لگایا اور کہا کہ ایم آر او کے سروے کے بعد نقشہ کو بدل دیا گیا اور اب گندے پانی کے نالے کو گذارنے کی مذموم کوشش جاری ہے ۔ صدر بیگم پیٹ مسجد کریم پاشاہ بھائی نے کہا کہ بستی والوں اور مقامی مسلمانوں کی مرضی کے خلاف مسلم کاز کو نقصان پہونچاتے ہوئے اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ مقامی مسلمانوں نے سرینواس یادو کے رویہ پر سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے مسئلہ کو چیف منسٹر سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT