Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / مشتبہ آئی ایس آئی ایجنٹ ارکان خاندان سے بات چیت کے بعد پھوٹ پھوٹ کر رونے لگا

مشتبہ آئی ایس آئی ایجنٹ ارکان خاندان سے بات چیت کے بعد پھوٹ پھوٹ کر رونے لگا

میرٹھ ۔ 4 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) آئی ایس آئی کا مشتبہ ایجنٹ محمد اعزاز جسے یوپی ٹاسک فورس نے 27 نومبر کو حساس دستاویزات کے ساتھ جو ہندوستانی فوج کے بارے میں تھے، گرفتار کیا تھا۔ پاکستان میں مقیم اپنے ارکان خاندان کے ساتھ ٹیلیفون پر بات چیت کے بعد پھوٹ پھوٹ کر رونے لگا۔ پولیس ذرائع کے بموجب تقریباً 6 منٹ تک ٹیلیفون پر بات چیت کی گئی جس کی ضلعی عدالت نے اجازت دی تھی۔ پولیس ذرائع کے بموجب اعزاز نے اپنی والدہ ارشاد بیگم، بہنوں شبنم، شہزاد اور ساجدہ سے اپنے بھائی حداد عرف پرنس کے ٹیلیفون نمبر پر بات چیت کی۔ بات چیت کے اختتام پر وہ پھوٹ پھوٹ کر رونے لگا۔ پولیس نے کہا کہ اس نے اپنی والدہ کو اپنی ہندوستانی صیانتی محکموں کے ہاتھوں گرفتاری کی اطلاع دی۔ تاہم تیقن دیا کہ وہ جلد ہی آزاد ہوجائے گا۔ اس نے کہا کہ اس کی صحت اچھی ہے۔ اس نے تسلی دی کہ وہ اپنے وطن واپس ہوجائے گا۔ عرفان آباد، اسلام آباد ، پاکستان کے ساکن اعزاز کو یوپی اسپیشل ٹاسک فورس نے گرفتار کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT