Tuesday , September 26 2017
Home / سیاسیات / مشرف بہ اسلام ہونے علیگڈھ کے دلتوں کی دھمکی

مشرف بہ اسلام ہونے علیگڈھ کے دلتوں کی دھمکی

موری کی تعمیر پر اعلیٰ ذات کے ٹھاکروں سے تصادم ، حکام پر تعصب کا الزام
علیگڈھ ۔22 مئی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) اُترپردیش کے شہر علیگڈھ کے قریب ایک ٹاؤن کے دلتوں نے اسلام قبول کرلینے کی دھمکی دیتے ہوئے الزام عائد کیا ایک موری ( چھوٹی ڈرینج ) کی تعمیر کے مسئلہ پر اعلیٰ ذات کے ٹھاکروں سے ان کے تصادم کے بعد سے پولیس اُنھیں نشانہ بنارہی ہے ۔ موضع کیشوپور میں دلت طبقہ کے افراد کو 16 مئی کو ٹھاکروں سے جھڑپ ہوگئی تھی جس میں کئی افراد زخمی ہوگئے تھے ان میں اگرچہ دلتوں کی ہی اکثریت تھی ۔ دو ذاتوں کے ارکان کے مابین پرتشدد تصادم کے بعد پولیس نے دونوں کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا لیکن دلتوں نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ جہاں کارروائی کی بات آتی ہے تو پولیس اس ( دلت ) برادری کے خلاف امتیازی سلوک کررہی ہے ۔دلتوں نے سخت اور دو ٹوک الفاظ میں وارننگ دی کہ ’’اگر ہفتہ تک انصاف نہیں کیاگیا تو وہ (دلت ) دین اسلام قبول کرلیں گے ‘‘ ۔ مشرف بہ اسلام ہونے برہم دلتوں کی دھمکی کے بعد انتظامیہ متحرک ہوگیا ہے ۔ ایس ڈی ایم کمار ورما نے کہاکہ اس واقعہ کی منصفانہ اور غیرجانبدارانہ انداز میں تحقیقات کی جارہی ہیں۔ ورما نے کہاکہ دیہی علاقوں میں موریوں اور پانی کی لائینوں کی تعمیر کے مسئلہ پر تنازعات معمول کے واقعات تصور کئے جاتے ہیں لیکن ان سے کبھی اس قسم کا بین طبقاتی تصادم نہیں ہوتا ۔ انھوں نے مزید کہاکہ ’’ہم دونوں طبقات سے اپیل کرتے ہیں کہ صبر و تحمل کا مظاہرہ کریں اور حکام پر بھروسہ رکھیں ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT