Saturday , September 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مشن کاکتیہ سے عہدیداروں اور گتہ داروں کی چاندی

مشن کاکتیہ سے عہدیداروں اور گتہ داروں کی چاندی

کوہیر میںسوائے بڑا تالاب کے دیگر تالابوں میں پانی کی کمی ‘ کسانوں میں تشویش

کوہیر ۔ 12 ؍ فبروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی تلنگانہ حکومت نے مشن کاکتیہ پروگرام کو متعارف کرتے ہوئے آبی ذخائر کو مستحکم کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے تاکہ ریاست تلنگانہ میں پانی کی کوئی کمی محسوس نہ ہو جس کے تحت ریاست تلنگانہ میں کروڑہا  روپئے خرچ کئے جا رہے ہیں اسی طرح ضلع سنگاریڈی کے کوہیر منڈل میں مشن کاکتیہ کے پہلے مرحلے میں 10 مواضعات سے 14 تالابوں کا احاطہ کرتے ہوئے بڑے اور چھوٹے کنٹوں کی تعمیر مرمت کے لئے 2.72 کروڑ لاکھ روپئے خرچ کئے گئے ہیں ۔ اس معاملہ میں نمائندہ سیاست نے کوہیر کے کسانوں سے بات چیت کرنے پر بتایا کہ جو رقم مشن کاکتیہ پروگرام میںخرچ ہوتی ہے اس سے صرف گتہ داروں اور متعلقہ عہدیداروں کی چاندی ہوئی اور عوام کا پیسہ رائیگاں ہوگیا ہے ۔ موضع گڈگیارپلی میں واقع بڑا تالاب کے سواء کوئی تالاب میں وافر مقدار میں پانی نہیں ہے ۔ پرساپلی ‘ چینل گیٹ ‘ بڑم پیٹ ‘ وغیرہ میں تھوڑا بہت پانی موجود ہے ۔ موسم گرما آنے تک وہ بھی خشک ہوجاسکتا ہے ۔ کسانوں نے بتایا کہ تالابوں میں مٹی کے نکاسی کی گئی لیکن بارش کا پانی تالابوں میں آنے کے ذریعہ نہیں بنایا گیا اس وجہ سے تالابوں میں پانی جمع نہیں ہے حلقہ اسمبلی ظہیرآباد ریاست تلنگانہ باڈر ہے جہاں پانی  پڑوسی ریاست کرناٹک چلا جا رہا ہے اس کی روک تھام کی سخت ضرورت ہے ابھی ماہ جنوری فبروری  میں کئی بورویلس میں پانی کم ہوگیا ہے اس لئے کسانوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ۔ موسم گرما اپریل اور مئی میں حالات مزید تشویشناک ہونے کے امکانات پیدا ہوگئے ہیں ۔ مسٹر اودے بھاسکر محکمہ آبپاشی ڈپٹی انجنیئر سے ربط پیدا کرنے پر انہوں نے بتایا کہ پہلے مرحلے میں جملہ 14 تالابوں اور کنٹوں کی تعمیر و مرمت کی گئی ہے جو رقم خرچ کی گئی ہے  حسب ذیل فہرست موضع ماچرریڈی پلی 10 لاکھ روپئے ‘ پرسا پلی 11.75 ‘ چنتل گھٹ ‘ 14.64 ‘ پچارا گڑ ‘ 14.55 ‘ سجاپور 12.14 ‘ لالہ کنٹہ کوہیر 20.16 ‘ وینکٹاپور 14.06 ‘ وینکٹاپور 9.97 ‘ فاتی ریڈی پلی 26.52 ‘ ناگی ریڈی پلی چھوٹا تالاب 24.68 ‘ پیڈی گمل  41.58 ‘ بڑم پیٹ ‘ 37.12 پرساپلی چھوٹا تالاب 7.33 پرساپلی 27.07 خرچ کئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا دوسرے مرحلے کے لئے 1.66 کروڑ روپئے کا تخمینہ تیار کر کے روانہ کر دیا گیا ہے ۔ کسانوں نے حکومت سے خواہش کی ہے کہ مشن کاکتیہ پروگرام میں شفافیت پیدا کرتے ہوئے ضروری اقدامات انجام دیں ۔

TOPPOPULARRECENT