Tuesday , October 17 2017
Home / Top Stories / ’مصالحتی مشن‘: نواز شریف کی سعودی عرب سے ایران آمد

’مصالحتی مشن‘: نواز شریف کی سعودی عرب سے ایران آمد

تہران۔ 19 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف سعودی عرب کا ایک روزہ دورہ مکمل کرنے کے بعد منگل کو ایران پہنچ گئے ہیں۔ نواز شریف یہ دورے ایران اور سعودی عرب کے درمیان حالیہ کشیدگی کے تناظر میں ’مصالحتی کوششوں‘ کے سلسلے میں کر رہے ہیں۔ ان دوروں میں پاکستان کی بری فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف بھی وزیر اعظم کے ہمراہ ہیں۔ ایرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق تہران آمد کے بعد پاکستانی وزیرِ اعظم نے ایرانی وزیرِ دفاع حسین دہقان سے ملاقات کی ہے۔ اس ملاقات میں نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کا خواہاں ہے اور وہ ایران اور سعودی عرب کی کشیدگی کم کرنے کے لیے ہر ممکن کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ اس موقع پر ایرانی وزیر نے کہا کہ پاکستان انتہائی نازک وقت میں اہم کردار ادا کر رہا ہے اور اس کی یہ کوششیں عالمِ اسلام کے لیے فائدہ مند ثابت ہوں گی۔

نواز شریف ایران کے دورے کے دوران صدر حسن روحانی سے بھی ملاقات کریں گے۔ پاکستان پہلے ہی یہ کہہ چکا ہے کہ ایران اور سعودی عرب دونوں کو چاہیے کہ وہ اپنے باہمی اختلافات کو اس مشکل وقت میں امتِ مسلمہ کے اتحاد کی خاطر پرامن طریقے سے حل کریں۔ پیر کو اس سلسلے میں سعودی عرب کے دورے کے دوران ریاض میں وزیر اعظم نواز شریف اور سعودی حکام کے درمیان ملاقات ہوئی تھی۔ اس ملاقات کے بعد پاکستانی دفترِ خارجہ کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا کہ دونوں ممالک نے ’دہشت گردی اور انتہا پسندی‘ کے مشترکہ دشمن کے خلاف مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا ہے۔ تاہم اس بیان میں یہ وضاحت نہیں کی گئی تھی کہ اس تعاون یا ’مل کر کام کرنے‘ کی نوعیت کیا ہو گی اور کیا اس میں دوسرے اسلامی ممالک میں جاری کارروائیوں میں اشتراک بھی شامل ہے یا نہیں۔

TOPPOPULARRECENT