Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / مضر صحت غذائی اشیاء کا استعمال کم کرنے اقدامات

مضر صحت غذائی اشیاء کا استعمال کم کرنے اقدامات

کمپنیوں پر اضافی ٹیکس اور اشتہارات پر پابندی کی سفارش
نئی دہلی۔ 9 مئی (سیاست ڈاٹ کام) غذائی اشیاء تیار کرنے والوں کیلئے فوڈ ریگولیٹر FSSAI نے سخت قوانین تیار کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ ایسی کمپنی جو غذائی اشیاء میں زائد مقدار میں چربی، شکر اور نمک وغیرہ استعمال کرتی ہیں انہیں سخت اقدامات جیسے ٹیکس اور امتناع کے علاوہ بچوں کے پروگرامس میں اشتہارات پر پابندی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ فوڈ ریگولیٹر نے غذائی اشیاء میں چربی، شکر اور نمک کے استعمال اور اس کی وجہ سے ہندوستانی آبادی پر ہونے والے صحت کے اثرات کا جائزہ لینے 11 رکنی پیانل تشکیل دیا تھا۔ اس پیانل نے غیرصحت مندانہ غذائی اشیاء کا استعمال کرتے ہوئے مختلف امراض جیسے کینسر، ذیابیطس وغیرہ کا بوجھ کم کرنے کے سلسلے میں اپنی رپورٹ پیش کردی ہے۔ اس پیانل میں شامل مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والے ماہرین نے متوازن غذا کی سفارش کی اور کہا کہ کاربوہائیڈریٹ سے 60 تا 70 فیصد جملہ کیلوریز ، 10 تا 12 فیصد پروٹین سے 20 تا 30 فیصد چربی سے حاصل کیا جانا چاہئے۔ فوڈ ریگولیٹر ان رہنمایانہ خطوظ پر تمام غذا تیار کرنے والی کمپنیوں کو پابند کرے گا۔ پیانل نے خلاف ورزی کرنے والی کمپنیوں پر اضافی ٹیکس ، ایکسائز ٹیکس اور بچوں کے ٹی وی شوز پر ان کے اشتہارات پر امتناع کی سفارش کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT