Thursday , March 30 2017
Home / Top Stories / معیشت کی 9 فیصد شرح ترقی متوقع

معیشت کی 9 فیصد شرح ترقی متوقع

نوٹوں کی تنسیخ کے اثرات کا اعتراف، گورنر آر بی آئی ارجیت پٹیل کا انٹرویو
نئی دہلی 17 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے طریقہ پر تنقید کی پرواہ کئے بغیر آر بی آئی کے گورنر ارجیت پٹیل نے آج کہاکہ آر بی آئی نے لاپرواہی اختیار کرلی ہے۔ اپنا کام کرتے وقت وہ کسی بھی تنقید کی پرواہ نہیں کرتی۔ اُنھوں نے کہاکہ ہندوستانی معیشت تیزی سے بحال ہوجائے گی۔ ارجیت پٹیل نے جو آر بی آئی کے اعلیٰ ترین عہدیدار ہیں، صرف دو ماہ قبل اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹ منسوخ کردیئے تھے۔ اُنھوں نے کہاکہ مسابقت انتہائی تیز رفتار ہوچکی ہے اور آر بی آئی صورتحال کو معمول پر لانے کے لئے کوشش کررہی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ اُن کے خیال میں یہ انتہائی اہم ہے کہ لوگ تیزی سے لاپرواہی کا رویہ اختیار کریں۔ کاروباری حلقوں میں اِس کی بہت اہمیت ہے۔ اُنھوں نے خیال ظاہر کیاکہ یہی کام اُنھوں نے بھی کر دکھایا ہے اور اپنا کام کرتے رہیں گے۔ ماضی کے چند مہینوں میں اُنھوں نے بڑے چیالنج قبول کئے ہیں۔ تعمیری تنقید بعض اوقات کھلے دل سے کی جاتی ہے اور ہمیں اِسے اس کے جذبۂ خلوص کے ساتھ قبول کرنا پڑتا ہے اور خود کو بہتر بنانے کی کوشش کرنی پڑتی ہے۔ وہ سی این بی سی ۔ ٹی وی 18 کو انٹرویو دے رہے تھے۔ اُنھوں نے کہاکہ ہر شخص اِس بات سے متفق ہے کہ صرف آر بی آئی ہی نہیں بلکہ وسیع تر بینکنگ نظام نے ایک ’’نمایاں کارنامہ‘‘ گزشتہ چند ماہ میں کر دکھایا ہے۔ جبکہ کئی چیالنج اُنھیں درپیش تھے۔ نوٹوں کی تنسیخ کے معیشت پر اثر کے بارے میں ارجیت پٹیل نے کہاکہ تقریباً ہر شخص اِس بات سے اتفاق کرتا ہے کہ اِن اثرات سے ہمیں تیزی سے کامیابی حاصل ہوگی۔ ہمیں شرح ترقی کی اہمیت مختصر مدت کے لئے کم کرنی پڑی تھی۔ تاہم اُنھوں نے کہاکہ ووٹوں کی تنسیخ تیز رفتار سے ہوئی اور یہ ہمارے منصوبے کا ایک حصہ تھا۔ اِس کے بعد اِس سوال پر کہ کیا ہندوستان 9 فیصد جی ڈی پی شرح ترقی حاصل کرسکے گا، ارجیت پٹیل نے کہاکہ یہ مشکل ہے کہ ٹھوس شرح ترقی کا تحفظ کیا جاسکے۔ اعلیٰ تر شرح ترقی اُسی صورت میں ممکن ہے جبکہ بنیادی اصلاحات خاص طور پر وہ عناصر جو پیداوار کے لئے ضروری ہوتے ہیں جیسے اراضی اور محنت کئے جائیں۔ آر بی آئی گورنر نے کہاکہ اب شرح ترقی 7.5 فیصد ہے اور اسے اب تک ہم نے بڑی مشکل سے برقرار رکھا ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ ہم کسی نہ کسی مرحلہ پر اعلیٰ تر شرح ترقی حاصل کرسکیں گے اور موجودہ شرح ترقی کی بہ نسبت زیادہ تیز رفتار شرح سے ترقی کریں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT