Sunday , September 24 2017
Home / ہندوستان / معیشت ہنوز خطرہ سے باہر نہیں ‘ افراط زر کی شرح میںاضافہ

معیشت ہنوز خطرہ سے باہر نہیں ‘ افراط زر کی شرح میںاضافہ

آئندہ ماہ ریزرو بینک آف انڈیا کی پالیسیوں پر نظر ثانی سے قبل صنعتی پیداوار میں بھی کمی
نئی دہلی 12 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستانی معیشت ابھی تک مکمل طور پر بہتر نہیں ہوئی ہے کیونکہ اب صنعتی پیداوار گذشتہ چار ماہ میں سب سے کم ہوگئی ہے ۔ صنعتی پیداوار کی شرح فی الحال 3.6 بتائی گئی ہے جبکہ افراط زر کی شرح میں بھی اضافہ درج کیا جا رہا ہے اور یہ اب پانچ فیصد کے نشانہ تک پہونچ رہا ہے ۔ مرکزی اعداد و شمار دفتر سے جاری کردہ ڈاٹا کے بموجب صنعتی پیداوار گذشتہ ستمبر میں 3.6 فیصد رہی ہے جبکہ سال گذشتہ یہ شرح 2.6 فیصد تھی ۔ کہا گیا ہے کہ مینوفیکچرنگ شعبہ کی کارکردگی میں گراوٹ اس کمی کا نتیجہ ہے ۔ علاوہ ازیں ریٹیل افراط زر کی شرح میں بھی اضافہ درج کیا گیا ہے ۔ اب یہ اضافہ ماہ اکٹوبر میں 5 فیصد کے نشانہ تک پہونچ رہا ہے جبکہ یہ شرح جاریہ سال ستمبر میں 4.41 فیصد تھی ۔ اسوچم کے سکریٹری جنرل ڈی ایس راوت نے کہا کہ دو اہم شعبوں سے واضح ہوجاتا ہے کہ ہندوستانی کو ابھی بھی سخت چیلنجس کا سامنا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے نمٹنے کیلئے موثر حکمت عملی کی ضرورت ہے تاکہ افراط زر کی شرح ایک بار پھر کمی کی سمت آسکے ۔ آج جو ڈاٹا جاری کیا گیا ہے آر بی آئی کی جان سے ماہ ڈسمبر میں اپنی پالیسیوں پر نظرثانی کیلئے اسی کو استعمال کیا جائیگا ۔ کہا گیا ہے کہ ماہ اکٹوبر کے دوران غذائی اجناس اور مشروبات کی قیمتوں میں اضآفہ ہوا ہے ۔ دالوںاور مصالحہ جات کی قیمتوں میں بھی اضافہ کے نتیجہ میں افراط زر کی شرح میں اضافہ کا رجحان پیدا ہوا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT