Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / مغربی بنگال میں نو زائیدہ بچوں کی اسمگلنگ کا بڑا گروہ بے نقاب

مغربی بنگال میں نو زائیدہ بچوں کی اسمگلنگ کا بڑا گروہ بے نقاب

کئی ریاستوں میں نیٹ ورک کی موجودگی ۔سی آئی ڈی کا ادعا ۔ لا ولد جوڑوں کو بچے فروخت کئے جاتے تھے
کلکتہ24نومبر(سیاست ڈاٹ کام)مغربی بنگال میں سی آئی ڈی کے ذریعہ پیدا ہونے والے نوزائیدہ بچوں کی اسمگلنگ کرنے والے گروہ کو بے نقاب کیے جانے کے دودن بعد یہ حقیقت سامنے آرہی ہے یہ ریاکٹ شمال مشرقی ہندوستان اپنی نوعیت کا بہت بڑا ریاکٹ ہے جو کئی ریاستوں میں پھیلا ہوا ہے ۔آ ج سی آئی ڈی نے اس معاملے میں 13ویں شخص کی گرفتار کیا ہے ۔کرشنا نرسنگ ہوم کے مالک پارتھا چٹرجی کی گرفتاری ہوئی ہے ۔چٹرجی ایک دہائی سے نرسنگ ہوم چلارہے ہیں اور وہ اس ریکٹ میں شامل ہیں ۔اس کے علاوہ اس ریاکٹ میں پولیس  نے کئی این جی او کے ہیڈ کو بھی گرفتار کیا ہے ۔سی آئی ڈی کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل بھارت لال مینا نے کہا کہ اب تک اس معاملے میں 13افراد کی گرفتاری ہوگئی ہے ۔ان تمام افراد کو انڈین پینل کوڈ کی دفعہ 369(دس سال سے کم عمر کے بچوںکااغوا)370 (ٹریفکنگ)120بی(مجرمانہ سازش)دفعہ 34کے تحت گرفتار ی کی گئی ہے ۔یہ ریکٹ نرسنگ ہوم کی مدد سے چلایا جارہا تھا ۔

اس کے علاوہ این جی او اور نرسنگ ہوم کا عملہ بھی اس میں شامل تھا۔نرسنگ ہوم اسٹاف اور ڈاکٹر پہلے بچے کو مردہ قرار دے کر پیدائشی گارجین کوسرٹیفکٹ جاری کردیتے مگرمردہ بچہ کو ان کے حوالے نہیں کیا جاتا۔اس کے بعد ان بچوں کو این جی اوز کے ہاتھوں فروخت کردیا جاتا ۔لڑکیوں کی قیمت ایک لاکھ روپیہ سے لے کر 1.5لاکھ تک ہوتی اورلڑکے کی قیمت 2لاکھ روپیہ سے 3لاکھ روپیہ تک لی جاتی تھی۔یہ ریاکٹ کلکتہ و اطراف میں گزشتہ تین سالوں سے سرگرم تھا۔سی آئی ڈی نے بتایا کہ اس گروہ کا نیٹ ورک صرف بڑے شہروں ممبئی، دہلی تک محدود نہیں تھا بلکہ اس گروہ کے تعلقات امریکہ اور برطانیہ جیسے ملکوں سے بھی تھا اور وہ ان بچوں ان ملکوں تک پہنچاتا تھا۔نرسنگ ہوم کے عملے کو بھی اس میں کمیشن دیا جاتا تھا ۔کلکتہ و اطراف کے ایک درجن نرسنگ ہوم اس ریاکٹ کا حصہ تھا ۔ان بچوں کو دہلی،ممبئی کے علاوہ امریکہ اور برطانیہ تک میں فروخت کیا گیا ہے ۔واضح  رہے کہ منگل کے دن سی آئی ڈی نے شمالی 24پرگنہ کے بدروئی میں واقع ایک نرسنگ ہوم پر چھاپہ مارکر اس گروہ کا پردہ فاش کیا تھا ۔پولس نے چھاپہ کے دوران دو بچوں کو بھی برآمد کیا جو کپڑے میں لپیٹ کر بسکٹ کے کارٹون میں رکھا کر خریدار کے حوالے کرنے کی تیاری کی جارہی تھی۔مینا نے کہا کہ سی آئی ڈی کو شبہ ہے کہ اس ریکٹ کا نیٹ ورک دور تک پھیلا ہوا ہے اور اس میں مزید افراد ملوث ہوسکتے ہیں ۔کل سی آئی ڈی نے ڈاکٹر سنتوش کما سمانترا کو کالج اسٹریٹ کے ایک نرسنگ ہوم سے گرفتار کیا تھا ۔اس کے فوری بعد جنوبی کلکتہ کے بے ہالا کے علاقے میں واقع ایک نرسنگ ہوم کے تین اسٹاف کو بھی گرفتار کیا گیا۔اس کے علاوہ مزید کئی نرسنگ ہوم پر سی آئی ڈی کی نظر اور اس کے خلاف جانچ کی جارہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT