Friday , June 23 2017
Home / سیاسیات / مغربی کنارہ میں بلدی انتخابات ‘ فلسطینی عوام کی رائے دہی

مغربی کنارہ میں بلدی انتخابات ‘ فلسطینی عوام کی رائے دہی

رملہ 13 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) مقبوضہ مغربی کنارہ میں فلسطینی عوام نے آج بلدی انتخابات میں اپنے ووٹ کا استعمال کیا ۔ یہ انتخابات صدر محمود عباس کی فتح پارٹی اور مخالف اسلام پسندوں حماس کے مابین شدید اختلافات کو ظاہر کرتے ہیں۔ غزہ پٹی پر حماس کا کنٹرول ہے ۔ حماس اور فتح کے مابین کسی طرح کی مصالحت نہ ہونے سے اسرائیل ۔ فلسطین تنازعہ کی یکسوئی کی راہ میں رکاوٹیں ہیں۔ مغربی کنارہ اور غزہ میں 2006 کے بعد سے مشترکہ طور پر بیک وقت انتخابات نہیں ہوئے ہیں۔ اس وقت کے انتخابات میں حماس نے فلسطینی پارلیمانی انتخابات میں شاندار کامیابی حاصل کی تھی جس کے بعد تنازعہ پیدا ہوگیا تھا اور اس کے بعد کے سال میں تقریبا خانہ جنگی جیسی کیفیت پیدا ہوگئی تھی ۔ دونوں گروپس کے مابین کشیدگی میں اضافہ کے بعد حماس نے 2007 میں غزہ پر قبضہ کرلیا تھا جس کے بعد محمود عباس کی پارٹی فتح کو صرف مغربی کنارہ پر کنٹرول حاصل رہ گیا ہے ۔ تقریبا 300 بلدی کونسلس کیلئے رائے دہی کا آج صبح مقامی وقت کے مطابق سات بجے آغاز ہوا ۔ مغربی کنارہ کے درجنوں اسکولس میں پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ فلسطینی الیکشن کمیشن کے صدر نشین ہانا ناصر نے کہا کہ بیشتر امیدواروں کا تعلق فتح گروپ سے ہے جبکہ کچھ گاووں میں روایتی قبیلیوں اور خاندانوں نے امیدواروں کی فہرست کو قطعیت دی ہے ۔ حماس نے ان انتخابات کیلئے اپنے امیدوار نامزد نہیں کئے ہیں کیونکہ اس کا کہنا ہے کہ رائے دہی کے نتیجہ میں اختلافات میں مزید شدت پیدا ہوگی ۔ انتخابات کا آج شام سات بجے اختتام عمل میں آئیگا اور نتائج اتوار تک برآمد ہونگے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT