Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / مغربی کوریا سے درآمد ہونے والا سونا اور چاندی دھات ممنوعہ

مغربی کوریا سے درآمد ہونے والا سونا اور چاندی دھات ممنوعہ

قبل از وقت حکومت سے اجازت کی شرط، درآمدات میں اضافہ پر حکومت کا اقدام
حیدرآباد ۔ 26 اگست (سیاست نیوز) مغربی کوریا سے ملک میں لامتناہی سونے اور چاندی کی درآمدی کی وجہ سے حکومت نے اس پر روک لگاتے ہوئے دونوں دھاتوں کو ممنوعہ درآمدی اشیاء کی فہرست میں شامل کیا ہے، جس کی وجہ سے درآمد کرنے والے تجارتی اداروں کو قبل از وقت حکومت سے اجازت حاصل کرنا پڑے گا۔ یکم ؍ جولائی یا 21 اگست کے درمیانی ایام میں مغربی کوریا سے ایک بلین ڈالر لاگتی سونا چاندی درآمد کیا گیا ہے، جس کی وجہ سے حکومت نے امتناع عائد کردی ہے۔ سونے کے بسکٹ یا زیور کی شکل میں سونے اور چاندی کی درآمد پر امتناع عائد کیا ہے۔ بیسک کسٹم ڈیوٹی کے بغیر مغربی کوریا اور بھارت کے درمیان فری ٹیکس ٹریڈ جاری ہے اور فری ٹیکس ٹریڈ معاہدہ نہ رکھنے والے ملکوں سے درآمدات پر 10 فیصد کسٹم ڈیوٹی عائد کی جاتی ہے۔ عالمی سطح پر بھارت چین کے بعد سونے کا استعمال کرنے والا دوسرا سب سے بڑا ملک ہے۔ فی الحال 400 سے زائد درآمدات ممنوعہ اشیاء کی فہرست میں شامل ہیں اور ان اشیاء میں بعض جانور، چند اقسام کے تخم، یورینیم اور دھماکو مادہ بھی شامل ہے۔ عہدیداران کے مطابق یہ امتناع ڈبلیو ٹی او ضوابط کے مطابق ہے اور ایف ٹی اے ضوابط کی خلاف ورزی نہیں ہے۔ واضح ہوکہ ماہ جولائی میں سونے کی درآمد میں 95 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT