Tuesday , September 26 2017
Home / دنیا / مغربی یورپ کے راستے بند، ہزاروں تارکین وطن پھنس گئے

مغربی یورپ کے راستے بند، ہزاروں تارکین وطن پھنس گئے

اوپاتواچ (کروشیا) ۔ 19 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) مغربی یورپ میں کئے جانے والے نئے اقدامات اور سرحدی راستوں کی بندش سے بلقان کے راستے شمال کی طرف بڑھتے ہوئے ہزاروں تارکیں وطن میں اضطراب بڑھتا جا رہا ہے اور صورتحال کشیدہ ہوتی جا رہی ہے۔ کروشیا نے اپنے شمالی ہمسائے سلووینیا سے کہا ہیکہ وہ روزانہ 5000 تارکین وطن کو اپنے ملک میں داخل ہونے کی اجازت دیں۔ تاہم سلووینیا کے مطابق وہ صرف نصف تعداد کو قبول کر سکتا ہے۔ اس صورتحال کی وجہ سے سربیا سے متصل کروشیا کی سرحد پر لوگوں کی بڑی تعداد موجود ہے۔ ایک عہدیدار نے میڈیا کو بتایا کہ اس گزرگاہ پر موجود کیمپوں میں چند ہی دنوں میں جگہ ناکافی ہو جائے گی۔ لوگوں سے بھری ہوئی بسوں کی اتوار کو سربیا میں قطاریں لگنی شروع ہوئیں تو مایوس تارکین وطن اور کام کے دباؤ کا شکار پولیس افسران میں غصہ بھی بڑھنے لگا۔ رات بھر بہت سے افراد کو سردی اور بارش کے باوجود انتظار کرنے کو کہا گیا۔ اطلاعات کے مطابق 5000 تارکین وطن نے کروشیا کی سرحد پر موجود کیمپ میں سرد رات انتظار کرتے ہوئے گزاری جبکہ کہا جا رہا ہیکہ سرحد پار سربیا میں 50 بسوں میں موجود افراد کروشیا کی سرحد عبور کرنے کے منتظر رہے۔

TOPPOPULARRECENT