Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / مفت پارکنگ پر غیر مجاز پارکنگ فیس وصولی کے خلاف پولیس کی مہم

مفت پارکنگ پر غیر مجاز پارکنگ فیس وصولی کے خلاف پولیس کی مہم

دو افراد گرفتار ، پولیس کی کارروائی کے خلاف سیاسی دباؤ بھی ناکام ثابت
حیدرآباد۔ 8 اپریل (سیاست نیوز) شہر میں مفت پارکنگ کے مقامات پر غیر مجاز پارکنگ فیس کی وصولی کے خلاف محکمہء پولیس نے مہم کا آغاز کردیا ہے۔ 6اپریل کو روزنامہ سیاست میں صفحہ 9پر اس سلسلہ میں شائع ایک رپورٹ کے فوری بعد یہ کاروائی شروع ہوئی اور اس کاروائی میں دو افراد کو حراست میں لیتے ہوئے جیل بھیج دیا گیا۔ شہر کے مختلف مقامات پر خانگی تجارتی کامپلکس اور مفت پارکنگ کی جگہ پر غیر سماجی عناصر عوام سے روزانہ لاکھوں روپئے وصول کر رہے ہیں اور عوام 5یا 10روپئے کے لئے الجھنے کے بجائے پارکنگ فیس ادا کر دیتے ہیں۔ ایک تجارتی کامپلکس میں اگر روزانہ 1000 گاڑیاں آتی ہیں اور فی گاڑی 5روپئے بھی وصول کئے جاتے ہیں تو ایسی صورت میں یومیہ 5000روپئے ایک جگہ وصول کئے جا رہے ہیںجن کا کوئی حساب نہیں ہوتا اور نہ ہی ان رقومات پر کوئی ٹیکس لگایا جا سکتا ہے۔گزشتہ یوم شہر کی سرکردہ و معروف موبائل مارکٹ جگدیش مارکٹ سے عابڈس پولیس نے دو افراد کو گرفتار کیا جن میں دو تاجرین فیضول اور مسیح الدین شامل ہیں۔ پولیس کے بموجب عابڈس شاپنگ سنٹر میں غیر مجاز پارکنگ فیس وصول کرنے والوں کے خلاف کی گئی کاروائی پر بعض گوشوں سے سیاسی دباؤ ڈالتے ہوئے رکوانے کی کوشش کی گئی اور اس سلسلہ میں پرانے شہر سے تعلق رکھنے والے ایک رکن اسمبلی نے بھی گرفتار شدگان کو بچانے کی کوشش کی مگر پولیس نے منصوبہ بند طریقہ سے ان افراد کو جیل بھیج دیا۔ عابڈس شاپنگ سنٹر سے تعلق رہنے والے تاجرین کی اسوسی ایشن کے نائب صدر جناب محمد عبدالجنید نے بتایا کہ اسوسی ایشن کی جانب سے مارکٹ کی ترقی کیلئے وصول کی گئی رقومات استعمال میں لائی جاتی تھیں اور اسوسی ایشن نے پارکنگ فیس کی وصولی کے لئے بلدیہ سے اجازت بھی حاصل کی تھی اور اس لائسنس کی مدت 31مارچ کو ختم ہوئی جس کے فوری بعد یہ کاروائی کردی گئی۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے مختلف مقامات پر غیر مجاز پارکنگ فیس کی وصولی شہریوں کے لئے بیشک تکلیف دہ ہے لیکن پولیس اور بلدیہ کی جانب سے چنندہ مقامات پر کاروائی نہیں کی جانی چاہئے بلکہ جہاں کہیں غیر مجاز پارکنگ فیس وصول کی جا رہی ہے ان مقامات پر کاروائی کو یقینی بنایا جانا چاہیئے چونکہ یہ بات درست ہیکہ غیر مجاز پارکنگ فیس کی وصولی دن دھاڑے عوام کو لوٹنے کے مترادف ہے۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے عہدیداروں کا کہنا ہیکہ بلدیہ کے جانب سے عوام میں شعور بیداری مہم چلانے کے ساتھ بڑے تجارتی کامپلکس کے خلاف کاروائی کو یقینی بنایا جائے گا تا کہ اس لوٹ کھسوٹ کو روکا جاسکے۔ عابڈس کے علاوہ کوٹھی‘ سکندرآباد‘ لاڈ بازار ‘ امیر پیٹ ‘ نارائن گوڑہ ‘ حمایت نگر ‘ کاچی گوڑہ ‘ سوماجی گوڑہ اور مختلف مقامات پر موجود تجارتی کامپلکس بھی بلدیہ کی فہرست میں شامل ہیں جہاں غیر مجاز پارکنگ فیس وصول کئے جانے کی شکایات موصول ہو رہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT