Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / مفخم جاہ انجینئرنگ کالج میں جاریہ سال داخلہ موہوم

مفخم جاہ انجینئرنگ کالج میں جاریہ سال داخلہ موہوم

ایم بی اے اور فارمیسی کورسیس کو بھی اجازت نہیں ، آل انڈیا کونسل فار ٹیکنیکل ایجوکیشن
حیدرآباد۔19مئی (سیاست نیوز) شہر کے معروف انجنیئرنگ کالج مفخم جاہ انجینئرنگ و ٹکنالوجی میں آل انڈیا کونسل فار ٹیکنیکل ایجوکیشن کے احکام کے بعد جاریہ سال داخلہ نہیں دیئے جائیں گے؟اسی طرح امجد علی خان کالج آف بزنس اڈمنسٹریشن و سلطان العلوم کالج آف فارمیسی داخلہ نہیں دیئے جاسکیں گے؟ آل انڈیا کونسل فار ٹیکنیکل ایجوکیشن کی جانب سے سلطان العلوم ایجوکیشن سوسائٹی کے تحت چلائے جانے والے ان تعلیمی اداروں کے اجازت نامو ںکو زیر التواء رکھا ہے۔ ڈائرکٹر AICTEکے مطابق مفخم جاہ کالج آف انجنیئرنگ اینڈٹکنالوجی کو “No Admission”کے زمرہ میں رکھا گیا ہے اور ابھی داخلوں کو منظوری نہیں دی جا سکی ہے۔ مفخم جاہ انجینئرنگ کالج کے علاوہ سلطان العلوم کے احاطہ میں واقع امجد علی خان کالج آف بزنس اڈمنسٹریشن اور سلطان العلوم کالج آف فارمیسی کو ’’منظوری سے دستبرداری‘‘ کی فہرست میں شامل رکھا گیا ہے جس کے سبب ان کالجس میں بھی داخلوں کے امکانات موہوم سمجھے جا رہے ہیں۔ شہر کے پاش علاقہ میں واقع سلطان العلوم ایجوکیشن سوسائٹی کی اراضی کے تنازعہ کے منظر عام پر آنے کے علاوہ اس سلسلہ میں کونسل کو شکایات موصول ہونے کے بعد کونسل نے اس بات کا فیصلہ کیا ہے کہ قوانین کے اعتبار سے سوسائٹی کے پاس اپنی ملکیت والی جائیداد نہیں ہے جس کے سبب ان کالجس میں داخلوں کے عمل کے متعلق احکام جاری کئے جا رہے ہیں۔ آل انڈیا کونسل فار ٹیکنیکل ایجوکیشن کی جانب سے جاری کردہ احکامات کے مطابق ان کالجس کو جس فہرست میں رکھا گیا ہے وہ داخلوں سے قبل مکمل تفصیلات کے ساتھ کونسل سے رجوع ہوتے ہوئے داخلہ کو بحال کروا سکتے ہیں ۔ کونسل کے قوانین و ضوابط کے مطابق کالجس کی عمارت اور درکار زمین کا غیر متنازعہ ہونا اور سوسائٹی کی ملکیت ہونا لازمی ہے اور ایسی صورت میں جب کسی سوسائٹی کے پاس درکار زمین و جائیداد موجود نہیں ہے تو سوسائٹی کو کالجس کے اجازت کے حصول کیلئے اراضی کی لیز کے دستاویزات پیش کرنے ہوتے ہیں لیکن ’ ماؤنٹ پلیزنٹ ‘کے اس تنازعہ نے جو نوعیت اختیار کی ہوئی ہے اس کے بعد حالات مزید گنجلک ہوتے جا رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT