Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / مقتول فوجی کی سرکاری اعزاز کے ساتھ آخری رسومات

مقتول فوجی کی سرکاری اعزاز کے ساتھ آخری رسومات

ترنگے میں لپٹی ہوئی نعش‘ سجی ہوئی گاڑی کے ذریعہ آبائی وطن منتقل
انتیہری ( ہریانہ ) ۔30اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام) فوجی جوان مندیپ سنگھ کی جو دہشت گردوں کے حملہ میں میک چل سیکٹر جموں و کشمیر میں ہلاک کردیا گیا تھا ‘ پورے سرکاری اعزازات کے ساتھ اُن کے آبائی وطن میں آخری رسومات ادا کی گئیں۔ اُن کے ارکان خاندان اور دیہی عوام نے مطالبہ کیا کہ پاکستان کو بار بار غلط مہم جوئی کا منہ توڑ جواب دیا جائے ۔ فوجی کی نعش ترنگے میںلپٹی ہوئی تھی اور ایک سجی ہوئی فوجی گاڑی کے ذریعہ ان کے آبائی دیہات منتقل کی گئیں جہاں کثیر تعداد میں عوام پڑوسی دیہاتوں سے بھی ان کے آخری دیدار کیلئے پہنچ گئے تھے ۔ فوجی سپاہی مندیپ کے والد چتاکو آگ دینے پہنچے تھے ۔ چیف منسٹرہریانہ منوہر لال کٹھر ‘ سینئر فوجی عہدیدار اور ضلعی انتظامیہ کے ملازمین اس موقع پر موجود تھے ۔ دیہی عوام شہید مندیپ امر رہے کے اور پاکستان مخالف نعرے بلند کررہے تھے ۔ 30سالہ فوجی اپنے آبائی دیہات کو دیوالی کے موقع پر پہنچنے والا تھا اور اس تقریب میں اپنے خاندان کے نئے تعمیر کئے ہوئے مکان میں شریک ہونے والا تھا لیکن اس کے بجائے وہ ایک تابوت میں وطن واپس ہوا ۔ اس کے ارکان خاندان جو مقامی دیہاتی ہے اور دیگر تمام افراد کو سمجھانا بہت مشکل تھا ۔ مندیپ کے ارکان خاندان اور دیہی عوام نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ سپاہیوں کی قربانیاں کا بدلہ لیا جائے اور پاکستان کو سبق سکھایا جائے ۔ اُن کے دیہات کے عوام نے کہا کہ وہ لوگ شہید کی اعلیٰ ترین قربانی کے پیش نظر آج دیوالی نہیں منائیں گے ۔ تاہم ہر گھرانے نے فیصلہ کیا کہ ایک دیا ان کی یاد میں جلایا جائے گا ۔

مندیپ کی قربانی اس ضلع کا اندرون ایک ہفتہ دوسرا مکان ہے ۔ ضلع جموں میں بی ایس ایف کانسٹبل سشیل کمار جو اسی ضلع کے دیہات پے ہوا کا متوطن تھا شہید کردیا گیاتھا ۔ انتیہری سپاہیوں کے دیہات کی حیثیت سے شہرت رکھتا تھا ۔ کئی نوجوان یہاں سے فوج میں خدمات انجام دے رہے ہیں ۔ عوام میں برہمی پھیل گئی تھی کیونکہ کشمیر کے خطہ قبضہ پر بربریت کا یہ واقعہ پیش آیا جب کہ ایک سپاہی کی نعش کو دہشت گردوں نے مسخ کردیا ۔یہ سپاہی پاکستانی فوج کو اُس کی فائرنگ کا جواب دے رہا تھا جو پاکستانی فوج دراندازوں کو سرزمین ہند پر داخل ہونے کی سہولت فراہم کرنے فائرنگ کررہی تھی ۔ مقتول فوجی کے ارکان خاندان کو دلاسہ دیتے ہوئے چیف منسٹر کٹھر نے کہا کہ یہ اُن کا مطالبہ جو پاکستان کے خلاف سخت کارروائی  اور اسے منہ توڑ جواب دینے اور سبق سکھانے کے بارے میں ہے  مرکزی حکومت تک پہنچادیں گے۔کٹھر نے کہا کہ ہم اس کا انتقام لیں گے اور پاکستان کو سبق سکھایا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT