Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / مقررہ حد تک رقم کی اجرائی سے دونوں شہروں میں بینکوں کا گریز

مقررہ حد تک رقم کی اجرائی سے دونوں شہروں میں بینکوں کا گریز

کرنسی کی قلت سے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ۔ اے ٹی ایم اور پوسٹ آفسوں پر ہجوم ۔ صارفین کی برہمی
حیدرآباد۔21نومبر (سیاست نیوز) بینکوں میں نقد رقم کی قلت نے عوام کو مایوسی میں مبتلاکردیا ہے۔ آج ہفتہ کے پہلے دن صبح سے بینکوں میں نئے نوٹوں کی اور 100کے نوٹوں کی قلت سے پرانے نوٹ کی تبدیلی نہیں کی گئی اور کئی بینکوں نے گاہکوں کیلئے حد مقرر کردی اور طلب سے کم رقومات کی اجرائی عمل میں لاتے ہوئے یہ کہہ دیا گیا کہ رقم نکالنے کی حد کم کردی گئی ہے۔بینکوں کے رویہ کے سبب آج دونوں شہروں میں پوسٹ آفس اور اے ٹی ایم پر طویل قطاریں دیکھی گئی۔دونوں شہروں کے کئی علاقوں میں عوام نے شکایت کی کہ بینکوں نے آج پرانی کرنسی کی تبدیلی نہیں کی اور نہ ہی بینک سے رقومات نکالنے کی حد کے مطابق رقومات جاری کی گئیں۔ بینک حکام کا کہنا ہے کہ جو کرنسی وصول ہو رہی ہے اس میں بیشتر 500 اور 1000 کے نوٹ ہونے سے وہ کرنسی لوٹائی نہیں جا سکتی جبکہ جو چھوٹی کرنسی ہے جیسے 100اور50کے نوٹ تو وہ بینک تک پہنچ نہیں رہے ہیں ۔ بینک کا انحصار ریزرو بینک سے وصول ہونے والی نئی کرنسی نوٹوں پر ہی ہے اسی لئے بینک گاہکوں کو کرنسی کی تبدیلی کی سہولت فراہم کرنے سے قاصر رہے اور انہیں منہا کرنے کی حد میں اپنے طور پر تخفیف کرنی پڑی۔ حیدرآبادو سکندرآباد کے علاوہ اضلاع سے بھی شکایات موصول ہوئی ہیں کہ بینکوں کی جانب سے کرنسی تبدیلی سے انکار کردیا گیا جس کی وجہ سے عوام کا اژدھام اے ٹی ایم پر قطاروں میں لگ گیا۔ شہر کے بعض بینکوں میں گاہکوں نے کرنسی کی عدم موجودگی پر ہنگامہ آرائی کی۔ گاہکوں کی نعرہ بازی اور ہنگامہ آرائی سے حالات کشیدہ ہورہے تھے لیکن بینک عہدیداروں اور پولیس نے قابو پا لیا۔ بینک حکام نے بتایا کہ ملک میں کرنسی کی تنسیخ کے بعد جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اس سے نمٹنے کی کوشش میں بینک صرف اپنے پاس موجود کرنسی کی تبدیلی یقینی بنا سکتے ہیںیا پھر آر بی آئی سے نئی کرنسی کی وصولی کا انتظار کرسکتے ہیں۔ شہر میں آج عوام کو دشواریوں پر بینک کی قطاروں میں کھڑے عوام نے برہمی ظاہر کی ۔ خواتین نے شکایت کی کہ ان میں بیشتر کے پاس ڈیبٹ کارڈ بھی نہیں ہیں جو اے ٹی ایم سے پیسے نکال سکیں۔ پرانے شہر کے اے ٹی ایم آج بھی بتدریج بند رہے اور ان کی کشادگی کے متعلق بینک عہدیدار کوئی تیقن دینے سے قاصر ہیں۔ پرانے شہر کے کئی بینکوں میں اب بھی طویل قطاریں دیکھی جا رہی ہیں لیکن ہفتہ کے پہلے دن بینکوں میں نقد رقومات ختم ہونے کے سبب عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

TOPPOPULARRECENT