Monday , October 23 2017
Home / Top Stories / ملائم اور اکھیلیش سماج وادی پارٹی کی صدارت کے دعویدار

ملائم اور اکھیلیش سماج وادی پارٹی کی صدارت کے دعویدار

ملائم سنگھ الیکشن کمیشن سے ملاقات کے بغیر لکھنؤ واپس، باپ بیٹے میں صلح کیلئے اعظم خان کوشاں
لکھنؤ ؍ نئی دہلی ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ملائم سنگھ یادو اور ان کے فرزند اکھیلیش یادو نے باہم سمجھوتہ کی مزید کوششیں جاری رکھی۔ تاہم باپ اور بیٹے کی زیرقیادت پارٹی کے گروپس نے اپنے اپنے قائد کو سماج وادی پارٹی کا صدر قرار دیا۔ قبل ازیں اکھیلیش یادو کو پارٹی صدر کی حیثیت سے ان کے گروپ نے منتخب کیا تھا۔ ریاستی سماج وادی پارٹی صدر نریش اتم نے مین پوری، مرادآباد، فتح پور، اٹاوا، فرخ آباد، ہردوئی اور فیروزآباد کے ضلعی صدور کا اکھیلیش یادو کی ہدایت پر تقرر کیا۔ ایک صحافتی بیان میں چیف منسٹر کے کیمپ نے کہا کہ موجودہ ضلعی صدور کو ان کے عہدوں سے برطرف کردیا گیا ہے اور ان کی جگہ نئے صدور کا تقرر کیا گیا ہے۔ سابق ریاستی صدر شیوپال یادو نے ان تمام کو ان کے عہدوں سے برطرف کیا تھا تاہم ان کے بڑے بھائی ملائم سنگھ یادو نے انہیں برطرف کردیا تھا۔ یہ اقدام اس وقت کیا گیا جبکہ پارٹی ارکان پارلیمنٹ و اسمبلی کا ایک وفد الیکشن کمیشن نے سماج وادی پارٹی کے نام اور انتخابی نشان ’’سیکل‘‘ پر دعویداری کیلئے اپنی اکثریت کا ثبوت پیش کرنے نئی دہلی گیا ہوا ہے۔ تاہم اکھیلیش یادو لکھنؤ میں اپنی سرکاری قیامگاہ میں موجود ہیں۔ دہلی میں ملائم سنگھ یادو نے اپنے قریبی بااعتماد ساتھی امرسنگھ کے ساتھ ملاقات کی۔ بات چیت کے دوران الیکشن کمیشن سے رجوع ہوکر اپنی تائید کا مکتوب حاصل ہونے کا فیصلہ کیا گیا۔ تاہم تائیدی مکتوب کیلئے ارکان اسمبلی اور عہدیداروں کی 50 تعداد ضروری ہے۔ چند گھنٹے بعد ملائم سنگھ یادو شیوپال یادو کے ہمراہ نئی دہلی سے لکھنؤ واپس ہوگئے۔ وہ الیکشن کمیشن سے رجوع نہیں ہوئے۔ الیکشن کمیشن نے کہا کہ انہیں سماج وادی پارٹی کے بانی کی جانب سے کوئی مکتوب حاصل نہیں ہوا۔ درحقیقت ان کا تائیدی مکتوب رام گوپال یادو کی قومی جنرل سکریٹری کے عہدہ سے برطرفی کے سلسلہ میں الیکشن کمیشن کو پیش کیا  جانے والا تھا۔ شام میں ملائم سنگھ کی لکھنؤ واپسی پر اعظم خان نے آج ہی دوسری مرتبہ اکھیلیش یادو سے ملاقات کی ۔ وہ باپ بیٹے کے درمیان سمجھوتہ کیلئے کوشاں ہیں۔

پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس کا دوسرا
مرحلہ 9 مارچ تا 13 اپریل متوقع
نئی دہلی ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس کا دوسرا اور آخری مرحلہ 9 مارچ تا 13 اپریل جاری رہے گا۔ قبل ازیں جاریہ ہفتہ کابینی کمیٹی برائے پارلیمانی امور جس کے صدر راجناتھ سنگھ ہیں، بجٹ اجلاس کے 31 جنوری سے آغاز اور بجٹ کی یکم ؍ فبروری کو پیشکش کی سفارش کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT