Sunday , May 28 2017
Home / Top Stories / ملائم سنگھ سیکولر محاذ کے قائد ہوں گے: شیوپال

ملائم سنگھ سیکولر محاذ کے قائد ہوں گے: شیوپال

لکھنؤ 5 مئی (سیاست ڈاٹ کام) سماج وادی پارٹی میں آج اختلافات دوبارہ اُبھر آئے جبکہ سینئر لیڈر شیوپال یادو نے اعلان کیاکہ اُن کے بھائی ملائم سنگھ یادو اُن کے تشکیل دیئے ہوئے سیکولر محاذ کے  صدر ہوں گے۔ شیوپال جو جسونت نگر اسمبلی نشست پر حالیہ انتخابات میں اپنا قبضہ برقرار رکھنے میں کامیاب ہوگئے ہیں، حال ہی میں الٹی میٹم دے چکے ہیں کہ اگر اکھلیش یادو سیکولر محاذ تشکیل دینے کی کوششوں میں دست اندازی کریں گے تو پارٹی کی باگ ڈور تین ماہ کے اندر دوبارہ اُن کے والد ملائم سنگھ سنبھال لیں گے۔ وہ یادو خاندان کے مستحکم گڑھ اٹاواہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ اُنھوں نے کہاکہ سماجی انصاف کے لئے ’’سماج وادی سیکولر مورچہ‘‘ تشکیل دیا جائے گا۔ نیتا جی (ملائم سنگھ) اس کے قومی صدر ہوں گے۔ اکھلیش یادو کے ساتھ اختلافات رکھنے وا لے اُن کے چچا شیوپال نے ملائم سنگھ یادو سے اٹاواہ میں آج صبح ایک رشتہ دار کی قیامگاہ پر ملاقات کرنے کے بعد یہ اعلان کیا۔ شیوپال نے نیا سیکولر محاذ تشکیل دینے کے لئے ملائم سنگھ سے مبینہ طور پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ شیوپال یہ کہتے آرہے تھے کہ وہ جلد ہی سماج وادیوں (سوشیلسٹوں) کو متحد کرکے ایک ہی پلیٹ فارم پر لانے کی کوشش کریں گے۔ اکھلیش یادو نے تیقن دیا ہے کہ وہ پارٹی کی باگ ڈور نیتاجی (ملائم) کو سونپ دیں گے۔ شیوپال یادو نے چہارشنبہ کے دن کہا تھا کہ اُنھیں (اکھلیش کو) اب ایسا ہی کرنا چاہئے تاکہ سماج وادی پارٹی مستحکم ہوسکے۔ اُنھوں نے کہاکہ وہ تین ماہ کا وقت دے رہے ہیں ورنہ وہ ایک نیا سیکولر محاذ تشکیل دیں گے۔ سماج وادی پارٹی میں چچا شیوپال اور بھتیجے اکھلیش میں یوپی اسمبلی انتخابات کے دوران سخت کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔ اکھلیش کی زیرقیادت پارٹی نے انتخابات میں مقابلہ کیا لیکن اُسے بی جے پی کے ہاتھوں شرمناک شکست ہوئی۔ ملائم قبل ازیں سماج وادی پارٹی کے یوپی اسمبلی انتخابات میں ناقص مظاہرہ کے لئے اکھلیش یادو کو ذمہ دار قرار دے چکے ہیں۔ ملائم نے کہاکہ رائے دہندے سمجھتے ہیںکہ جو شخص اپنے باپ کا وفادار نہیں وہ کسی کا بھی وفادار نہیں ہوسکتا اور یہی وجہ پارٹی کی ناکامی کی رہی۔ رام گوپال یادو کہہ چکے ہیں کہ اکھلیش کو استعفیٰ دے دینا چاہئے۔ پارٹی کی باگ ڈور ملائم سنگھ کو سونپ دینے کا کوئی مطلب نہیں ہے۔ رام گوپال یادو اکھلیش کے قریبی بااعتماد ساتھی سمجھے جاتے ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT