Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / ملک بھر میں 22 فرضی یونیورسٹیز : سمرتی ایرانی

ملک بھر میں 22 فرضی یونیورسٹیز : سمرتی ایرانی

نئی دہلی۔/5مئی، (سیاست ڈاٹ کام ) ملک بھر میں تقریباً 22 فرضی یونیورسٹیز ( جامعات ) کام کررہی ہیں جن میں سے زیادہ 9اتر پردیش میں اور دہلی میں 5واقع ہیں۔ حکومت نے آج راجیہ سبھا میں یہ اطلاع دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے خلاف بہت جلد کارروائی کی جائے گی۔ وزیر فروغ انسانی وسائل سمرتی ایرانی نے کہا ہے کہ ان کی وزارت نے جعلی یونیورسٹیز اور غیر ملکی تعلیمی اداروں کی ایک فہرست وزارت خارجہ سے طلب کی ہے تاکہ طلباء کو ان کے جال میں پھنسنے سے روکا جاسکے۔یونیورسٹی گرانٹس کمیشن کے یہاں دستیاب تفصیلات کے بموجب ملک بھر میں 22فرضی یونیورسٹیز کام کررہی ہیں جو کہ یو جی سی ایکٹ 1956 کے خلاف قائم کی گئی ہیں۔ اترپردیش اور دہلی کے علاوہ مغربی بنگال میں 3، بہار، کرناٹک، کیرالا، مہاراشٹرا، تاملناڈو اور اوڈیشہ میں ایک، ایک بوگس یونیورسٹی چلائی جارہی ہیں۔ مرکزی وزیر نے بتایا کہ جعلی یونیورسٹیوں اور تعلیمی اداروں سے خبردار کرنے کیلئے ایک پورٹل Know Your College اور موبائیل ایپ بھی شروع کیا گیا۔ایک تحریری جواب میں سمرتی ایرانی نے بتایا کہ یوجی سی نے جن جعلی یونیورسٹیز کی فہرست تیار کی ہے ان میں دہلی کی یونائٹیڈ نیشن یونیورسٹی، کمرشیل یونیورسٹی لمیٹیڈ دریاگنج، وکیشنل یونیورسٹی، اے ڈی آر سنٹرک جوڈیشیل یونیورسٹی، اے ڈی آر ہاؤز راجندر پیلیس، انڈین انسٹی ٹیوٹ آف سائینس اینڈ انجینئرنگ کے علاوہ ناگپور کی راجہ عربک یونیورسٹی، نیشنل یونیورسٹی آف الکٹرو کامپلکس ہومیو پیتھی کانپور شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT