Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / ملک مودی کے ہاتھوں محفوظ نہیں : ممتا

ملک مودی کے ہاتھوں محفوظ نہیں : ممتا

انتہائی نامناسب اقدام: کانگریس، بڑے نوٹوں کی تنسیخ کے خلاف اپوزیشن کا متحدہ احتجاج
نئی دہلی ۔ 23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) متحدہ اپوزیشن آج بڑے نوٹوںکی تنسیخ کے خلاف پارلیمنٹ کے باہر ممتابنرجی کی زیرقیادت دہلی کی سڑکوں پر احتجاج کرتے ہوئے نکل آیا۔ ممتابنرجی نے کہا کہ ملک مودی کے ہاتھوں محفوظ نہیں ہے۔ انہوں نے ان کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا۔ حکومت نے دریں اثناء فیصلہ واپس لینے سے انکار کردیا۔ نائب صد رکانگریس راہول گاندھی نے اس مسئلہ پر مودی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ دنیا کا سب سے بڑا نامناسب معاشی تجربہ ہے۔ اس فیصلہ کے اعلان سے قبل خود مرکزی وزیرفینانس اور معاشی مشیراعلیٰ جس سے بے خبر تھے۔ 200 ارکان پارلیمنٹ نے ایوان کے روبرو احتجاجی مظاہرہ کیا۔ راہول گاندھی نے وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ وہ نوٹوں کی تنسیخ کے فیصلہ پر مباحث کے دوران ایوان میں موجود رہیں۔ جے ڈی یو قائد شرد یادو نے بڑے کرنسی نوٹوں کو منسوخ کرنے کے اقدام کا قانونی جواز جاننا چاہا اور چیلنج کیا کہ وزیراعظم اپنے اس فیصلہ سے ملک کو فائدہ پہنچنے کے دعوے کی پارلیمنٹ میں وضاحت کریں۔ این ڈی اے کی حلیف شیوسینا بھی ممتابنرجی کے نوٹوں کی تنسیخ کے خلاف راشٹرپتی بھون تک احتجاجی جلوس میں شریک تھی۔ اپوزیشن نے وزیراعظم کے بڑے کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے خلاف ایک یادداشت صدرجمہوریہ کو پیش کی۔ شیوسینا نے بھی احتجاجی مظاہرہ میں  حصہ لیا۔ مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے کہا کہ حکومت دانشوروں سے ان کی رائے جاننے سے دلچسپی رکھتی ہے۔ راہول گاندھی کے نوٹوںکی تنسیخ کے خلاف دلائل حکومت کے لئے ناقابل قبول ہیں۔ اپوزیشن پارٹیوں پر تنقید کرتے ہوئے روی شنکر پرساد نے کہا کہ پارلیمنٹ کے روبرو گرفتاری کے دوران اپوزیشن نے انسانی زنجیر بنائی ہے۔ بہتر ہوتا کہ وہ اس کے بجائے مقررین کی زنجیر بناتے۔

TOPPOPULARRECENT