Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ملک میں ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھ کر 6 کروڑ 26 لاکھ ہوگئی

ملک میں ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھ کر 6 کروڑ 26 لاکھ ہوگئی

نوٹ بندی فیصلے کے بتدریج اثرات
ملک میں ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھ کر 6 کروڑ 26 لاکھ ہوگئی
ٹیکس چوری کیلئے کوشاں افراد پر نظر ، بینک کھاتوں کو آدھار اور PAN سے مربوط کرنے سے معلومات کے حصول میں مدد
حیدرآباد۔25جولائی (سیاست نیوز) ملک میں کرنسی تنسیخ کے فیصلہ کے بعد ٹیکس دہندگان کی تعداد میں بھاری اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور حکومت ہند کی جانب سے 8نومبر 2016کو کئے گئے فیصلہ کے نتائج اب برآمد ہونے لگے ہیں ایسا ملک کے معاشی و اقتصادی اداروں کا ماننا ہے۔ محکمہ انکم ٹیکس کے اعلی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ کرنسی تنسیخ کے فیصلہ کے بعد ملک میں انکم ٹیکس ریٹرنس داخل کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور آئندہ دنوں میں مزید اضافہ ریکارڈ کئے جانے کا امکان ہے۔ سنٹرل بورڈ آف ڈائیریکٹ ٹیکسیشن کی جانب سے ملک میں ٹیکس دہندگا ن کا باریک بینی سے جائزہ لیا جا رہا ہے اور ٹیکس ادا کرنے سے بچنے کی کوشش کرنے والوں کے ریکارڈ بھی تیار کئے جانے لگے ہیں۔ صدرنشین سی بی ٹی ڈی مسٹر سشیل چندرا کے مطابق ملک کے مختلف علاقو ںمیں ٹیکس ادا کرنے والوں کی تعداد میں بتدریج اضافہ ہوتا جا رہا ہے اور لوگ اپنی آمدنی کے مطابق انکم ٹیکس کی ادائیگی کی سمت راغب ہونے لگے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مالی سال 2016-17 کے دوران ملک میں ٹیکس اادا کرنے والوں کی تعداد صرف 4کروڑ تھی لیکن کرنسی تنسیخ کے فیصلہ کے بعد رجحان میں تیز رفتار تبدیلی دیکھی گئی جس کے نتیجہ میں جاریہ مالی سال کے دوران 2کروڑ 26لاکھ انکم ٹیکس ریٹرنس داخل کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور ملک میں مجموعی ٹیکس ادا کرنے والی کی تعداد 6کروڑ 26لاکھ تک پہنچ چکی ہے۔صدرنشین سی بی ٹی ڈی مسٹر سشیل چندرا نے بتایا کہ ملک میں تمام بینک کھاتوں کو بیان کارڈ اور آدھار سے مربوط کرنے کے علاوہ عوام میں شعور اجاگر کرنے کے سبب آمدنی کے اعتبار سے لوگوں نے انکم ٹیکس ریٹرنس داخل کرنے شروع کردیئے ہیں جس کے نتیجہ میں یہ تعداد بڑھتی جا رہی ہے اور آئندہ دنوں میں اس میں مزید اضافہ کی توقع کی جا رہی ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ انکم ٹیکس ادا کرنے والوں یا ریٹرنس داخل کرنے والوں کی تعداد میں اندرون ایک برس 50 فیصد سے زیادہ کا اضافہ ملک کی معیشت میں استحکام کے علاوہ ملک میں موجود غیر مقیم ہندستانیوں کے بینک کھاتوں اور سرمایہ کاروں کی تفصیلات کا حصول اور ان کیلئے آسانیاں پیدا کرنے کا منصوبہ بھی ہے جس کے نتیجہ میں اس تعداد میں مزید اضافہ ممکن ہوگا۔انکم ٹیکس ادا کرنے یا ریٹرنس داخل کرنے والوں کی تعداد میں ہونے والا اضافہ محکمہ کے عہدیداروں کے بموجب حوصلہ افزاء ہے اور آئندہ دنوں میں دیگر محصولات کے سلسلہ میں کئے جانے والے اقدامات سے عوام میں مزید شعور اجاگر ہونے کی گنجائش ہے۔

TOPPOPULARRECENT