Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ملک میں پانی کا بحران ، حکومت رقص و سرور میں مگن : راہول

ملک میں پانی کا بحران ، حکومت رقص و سرور میں مگن : راہول

نئی دہلی ، 28 مئی (سیاست ڈاٹ کام) راہول گاندھی نے آج این ڈی اے حکومت پر اس کے دو سالہ اقتدار کے موقع پر منعقدہ پُرشکوہ تقریب پر کراری ضرب لگاتے ہوئے کہا کہ مہاراشٹرا میں پانی کی طلب میں کسانوں کی خودکشی ہورہی ہے، لیکن مودی حکومت ’’بالی ووڈ اسٹارز کے ساتھ رقص و سرور‘‘ کے ذریعے جشن منانے میں مگن ہے۔ دہلی میں برقی اور پانی کی مبینہ قلت پر بطور احتجاج کانگریس کے ’مشعل جلوس‘ کے دوران راہول نے پارٹی ورکرز سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر اروند کجریوال کو بھی نشانہ بنایا اور کہا کہ وہ صرف طاق۔ جفت اور آلودگی جیسے مسائل پر بات کرتے ہیں، ’’لیکن عملی کارکردگی نہیں دکھاتے‘‘۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ عام آدمی پارٹی لیڈر کو ’’غریبوں کے دکھ‘‘ کا احساس نہیں ہے۔ راہول نے احتجاجی اجتماع کو مودی اور کجریوال دونوں کے خلاف نعرے بازی کے درمیان بتایا کہ ’’دو سال گزر چکے۔ ملک بھر میں خشک سالی کا سامنا ہے۔ مہاراشٹرا میں ودربھ اور مراٹھواڑہ میں کسان خودکشی کررہے ہیں۔ اور یہاں انڈیا گیٹ کے پاس دو سال کا جشن منایا جارہا ہے، تقریب کا اہتمام ہوا ہے، بالی ووڈ کے لوگ آئے ہیں، گیتوں اور رقص کا اہتمام ہوا ہے‘‘۔ راہول نے خود کو مودی اور کجریوال سے مختلف باور کرانے کی سعی میں کہا کہ وہ گاندھی جی کے نظریہ کی مطابقت میں ’’سچائی کی سیاست‘‘ پر یقین رکھتے ہیں، اور ’’جھوٹے وعدوں کی سیاست‘‘ نہیں چلاتے۔ دونوں قائدین پر تنقید میں کانگریس لیڈر نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ وہ دونوں سمجھتے ہیں کہ ہندوستان میں ہمیشہ سارے عوام کو بے وقوف بناسکتے ہیں۔ ’’اگر ہندوستان کے عوام مجھ سے کہیں کہ سیاست میں دروغ گوئی سے کام لیں تو میں ایسا نہیں کرسکتا۔ یہ میری خصلت نہیں۔ مجھے بھلے ہی اظہارِ احساسات سے نقصان ہوا ہے لیکن میں جھوٹے وعدے نہیں کرتا ہوں۔ یہ ملک جھوٹے وعدوں سے نہیں بلکہ خون و پسینہ ایک کرنا پڑے گا۔‘‘

TOPPOPULARRECENT