Thursday , August 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ملک کی آزادی میں علماء کا ناقابل فراموش کردار

ملک کی آزادی میں علماء کا ناقابل فراموش کردار

محبوب نگر میں تقریب سے مفتی عبداللہ حامد رشادی کا خطاب

محبوب نگر /17 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) زندہ قوم کی تاریخ کا ہرصفحہ شہیدوں کے خون سے رنگین ہوتا ہے چنانچہ تحریک آزادی میں مسلمانوں اور بالخصوص علماء نے انگریز ظالم و جابر حکمرانوں کے پنجہ سے آزاد کروانے کیلئے اس دیش کے چمن کو اپنے خون سے سینچا ، بچوں کو یتیم اور بیویوں کو اس ملک کی خاطر بیوگی کا لباس پہنایا ۔ ایک ایک کرکے گلے میں پھانسی کا پھندا چوم کر سولی پر چڑھ گئے مگر انگریزی توپوں ، گولیوں کے سامنے گھٹنے نہیں ٹیکے گا ۔ مولانا  عبداللہ حامد رشادی نے ان خیالات کا اظہار دارالعلوم قصدرابسیل ٹرسٹ کی محبوب نگر کے زیر اہتمام جلسہ جدوجہد آزادی میں مسلمانوں اور علماء کا کردار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ مولانا نے زور دے کر کہا کہ ہم ملک کے معمار ہیں ۔ جس پر ہمیں ناز ہے ۔ مسلمان ہرگز ملک دشمن نہیں ۔ مولانا نے بڑے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج دینی مدارس کو دہشت گردی کا اڈہ اور مسلمانوں کو دہشت گرد قرار دیا جارہا ہے جبکہ ہندوستان کو ایٹمی ہتھیاروں سے لیس ، اگنی پرتھوی میزائل بنانے والے کون تھے ظاہر ہے جواب میں مرحوم اے پی جے عبدالکلام کا نام آئے گا ۔ اتنی قربانیوں کے باوجود مسلمانموں کو غدار کہنا اور جشن آزادی کے موقع پر صرف برادران وطن کے نام پر اکتفاد کرنا ور مسلم قائدین کے نام کو نکال دینا ملک اور تاریخ کے ساتھ جفاکاری ہے ۔ قبل ازیں مولانا نعیم کوثر رشادی ناظم جامعہ نے قومی پرچم لہرایا ۔ طلبہ نے ترانے پیش کئے ۔ علماء حفاظ و معززین شہر کی قابل لحاظ تعداد نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT