Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / ملک کی داخلی سلامتی پر راجناتھ سنگھ کی زیر صدارت اعلی سطحی اجلاس

ملک کی داخلی سلامتی پر راجناتھ سنگھ کی زیر صدارت اعلی سطحی اجلاس

بوڈو عسکریت پسندوں کے تشدد اور کشمیر کی صورتحال کا جائزہ

نئی دہلی۔5 اگست (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کی زیر صدارت ایک اعلی سطحی اجلاس میں اْج ملک کی داخلی صورتحال بشمول کشمیر اور آسام کے تازہ حالات کا جائزہ لیا گیا جبکہ کھوکرا جھار میں این ڈی ایف بی۔ ایس کے عسکریت پسندوں نے 14 افراد کو موت کے گھاٹ اتاردیا ہے۔ اجلاس میں وزیر فینانس ارون جیٹلی، وزیر دفاء منوہر پاریکر، مشیر قومی سلامتی اے کے ڈوال شریک تھے۔ داخلی سلامتی کے محاز بالخصوص کشمیر کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا کیوں کہ کشمیر میں حزب المجاہدین کے عسکریت پسند برہان وانی کی انکائونٹر میں ہلاکت کے بعد گزشتہ 27 دنوں سے معمولات زندگی مفلوج ہوگئی ہے۔ قبل ازیں آج صبح راجناتھ سنگھ نے مشیر قومی سلامتی ڈوال کے ساتھ تقریباً 30 منٹ تک بند کمرہ میں ملاقات کی جس میں انہیں، نیشنل ڈیموکریٹک فرنٹ آف بوڈو ڈینڈ کے خطرناک حملہ کی تفصیلات سے واقف کروایا گیا۔

یہ تنظیم سابق میں بھی سلسلہ وار قتل عام میں ملوث رہی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ اس مرتبہ بوڈو عسکریت پسندوں نے ایک نیا طریقہ کار اختیار کیا ہے اور تحقیقاتی ٹیموں کو گمراہ کرنے کے لئے آئی ایس آئی ایس کا نقاب لگاکر حملہ کیا ہے۔ یہ انکشاف اس وقت ہوا جب سکیوریٹی فورسس کی جوابی فائرنگ میں ہلاک عسکریت پسند کی این ڈی ایف بی ایس عسکریت پسند گروپ کے رکن کی حیثیت سے شناخت کی گئی۔ واضح رہے کہ آسام کے ضلع کھوکرا جھار میں آج دو پہر عسکریت پسندوں کی اچانک فائرنگ میں 12 افراد برسر موقع ہلاک ہوگئے جبکہ دیگر 2 افراد ہاسپٹل منتقلی کے دوران جانبر نہ ہوسکے۔ علاوہ ازیں مذکورہ اجلاس میں وادی کشمیر کی صورتحال کا بھی جائزہ لیا گیا۔ جہاں پر 9 جولائی سے جاری تشدد کی لہر میں 51 افراد جاں بحق اور 2 ہزار سے زائد لوگ زخمی ہوگئے ہیں۔ دریں اثناء کھوککرا جھار واقعہ کو مملکتی وزیر داخلہ کرن رجیجو نے بدبختانہ قرار دیا اور کہا کہ یہ پتہ چلانے کی کوشش کی جارہی ہے کہ اس وحشیانہ کارروائی کے پس پردہ کن عناصر کا ہاتھ ہے۔

TOPPOPULARRECENT