Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / ممبئی دہشت گرد حملوں کے بعد ہندوستان میں مزید حملوں کا منصوبہ : ہیڈلی

ممبئی دہشت گرد حملوں کے بعد ہندوستان میں مزید حملوں کا منصوبہ : ہیڈلی

ممبئی ایرپورٹ، بی اے آر سی، بحریہ کا فضائی اڈہ، شیوسینا بھون پر حملوں اور بال ٹھاکرے کے قتل کی سازش

ممبئی ۔ 12 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) خون سرد کردینے والے مزید انکشافات کرتے ہوئے اپنی گواہی میں پاکستانی نژاد امریکی دہشت گرد ڈیوڈ کولمن ہیڈلی نے آج کہا کہ القاعدہ اس کے ساتھ دہلی کے قومی و دفاعی کالج پر حملے کے سلسلہ میں مسلسل ربط برقرار رکھے ہوئے تھا۔ لشکرطیبہ اور آئی ایس آئی نے سازش کی تھی کہ ممبئی ایرپورٹ، بی اے آر سی اور بحریہ کے ہوائی اڈہ کو بھی حملوں کا نشانہ بنایا جائے۔ ہیڈلی نے خصوصی جج جی اے سنپ کے اجلاس پر امریکہ سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ گواہی دیتے ہوئے کہا کہ اس نے شیوسینا کے ایک رکن کے ساتھ قریبی تعلقات قائم کئے تھے کیونکہ اس کے خیال میں لشکرطیبہ پاکستانی دہشت گرد تنظیم آئندہ شیوسینا بھون پر حملے اور شیوسینا کے سربراہ ’’آنجہانی بال ٹھاکرے‘‘ کو قتل کرنے میں دلچسپی ظاہر کرسکتی تھی۔ ہیڈلی نے عدالت سے کہا کہ پاکستان میں اس کے آقا جاسوس محکمہ آئی ایس آئی اور لشکرطیبہ چاہتے تھے کہ ممبئی ایرپورٹ اور بحریہ کے فضائی اڈہ کو نومبر 2008ء میں دہشت گرد حملہ کا نشانہ بنایا جائے۔ ہیڈلی نے اپنی تفصیلی گواہی میں انکشاف کیا کہ القاعدہ کو کیسے 26 نومبر کے ممبئی دہشت گرد حملہ کے بعد مزید دہشت گرد حملے ہندوستان میں کرنے سے دلچسپی تھی۔

TOPPOPULARRECENT