Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / ممبئی دہشت گرد حملے کی خامیوں کا پتہ لگانا ضروری :پی اے سی

ممبئی دہشت گرد حملے کی خامیوں کا پتہ لگانا ضروری :پی اے سی

نئی دہلی ۔10 جنوری۔(سیاست ڈاٹ کام) لوک سبھا کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے ممبئی پر دہشت گردانہ حملے کی وجہ بننے والی خامیوں کا پتہ لگا کر اس کی جوابدہی طے کرنے کیلئے تحقیقات شروع کرنے کی سفارش کی ہے ۔ وزارت دفاع نے ممبئی حملے کے بارے میں کمیٹی کے سامنے پیش کردہ ’’کارروائی نوٹ‘‘ میں کہا ہے کہ ہندستانی کوسٹ گارڈ کے پاس انتہائی وسیع سمندری علاقے کی نگرانی کیلئے کافی وسائل دستیاب نہیں تھے ۔ وزارت نے یہ بھی تسلیم کیا ہے کہ ممبئی پر دہشت گردانہ حملوں کی ذمہ داری فوج کے کسی حصے پر نہیں ڈالی جا سکتی کیونکہ اس سے پہلے سمندر کے راستے سے دہشت گردانہ حملے کی کوئی اتنی بڑی واردات نہیں ہوئی تھی اور نہ ہی اس طرح کے کسی حملے کے بارے میں کوئی ’’قابل اعتماد‘‘ انٹلیجنسمعلومات تھی۔کمیٹی نے بہر حال وزارت کی اس دلیل کو مسترد کر دیا کہ اس سے پہلے سمندری راستے سے اس طرح کا دہشت گردانہ حملہ نہیں ہوا تھا۔اس کا کہنا ہے کہ ملک کی سیکورٹی اور دفاعی تیاریاں صرف پہلے کے واقعات کی بنیاد پر مبنی نہیں کی جاتیں بلکہ وہ ہر طرح کے اتفاقی حالات اورممکنہ حملوں کو ذہن میں رکھ کر کی جاتی ہیں۔کمیٹی نے سلامتی کی ناقص تیاریوں پر حکومت کو زد میں لیتے ہوئے کہا کہ ہندستانی کوسٹ گارڈ کے افسران کی لاپروائیوں کا پتہ لگانے کیلئے تحقیقات کی سفارش کی جاتی ہے جس سے کہ اس معاملے میں جوابدہی طے کی جا سکے ۔

TOPPOPULARRECENT