Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / ممبئی میں ایک غریب خاتون کی دریا دلی

ممبئی میں ایک غریب خاتون کی دریا دلی

پڑوسیوں کو مفت میں پانی کی سربراہی
ممبئی۔/12مئی ، ( بشکریہ دی ہندو ) ممبئی کی ایک خاتون زرینہ انپی زندگی کی جنگ تنہا لڑ رہی ہے لیکن انعام و اکرام کی تمنا کے بغیر خاموش خدمت خلق بھی انجام دے رہی ہے۔ یہ خاتون 10بچوں کی ماں بھی ہے اور معاشی تنگدستی کا شکار بھی ہے ،اس کے باوجود اہلیان محلہ کی مدد کرتے ہوئے قابل تقلید مثال قائم کردی ہے۔ علاقہ من خورد کی سلم بستی اندرا نگر میں یہ خاتون اپنی باؤلی سے پڑوسیوں کو مفت میں پانی فراہم کررہی ہے جہاں پر ان دنوں پانی کی شدید قلت پائی جاتی ہے ۔ اس بستی کے مکینوں کو پینے کے پانی کے ساتھ واٹر مافیا سے کھارا پانی بھی خریدنا پڑتا ہے۔ یہ کھارا پانی غیر قانونی بورویلز اور باؤلیوں سے لایا جاتا ہے ۔ یہ پانی کپڑے اور برتن دھونے اور حمام یا بیت الخلاء میں استعمال کیا جاتا ہے ۔زرینہ کے مکان میں بھی ایک قدیم کھارے پانی کی باؤلی موجود ہے لیکن انہوں نے حیالات کا فائدہ اٹھاکر پانی کی تجارت نہیں کی ،انہوں نے کہا کہ بحران کی اس گھڑی میں کیسے پانی بیچے صاحب ؟ جب خدا نے زندگی کومارا، پانی بیچ کر کیا جینا۔ غریب اور خوددار خاتون کو 10بچے ہیں جن میں 2ذہنی طور پر معذور ہیں اور شوہرانھیں بچوں کے ساتھ چھوڑ کر چلا گیا ہے۔ زرینہ نے بتایا کہ زردوزی کام کرکے ماہانہ1500 تا 2000 روپئے کمالیتے ہیں۔ اللہ کا فضل و کرم ہے کہ ان کے مکان میں باؤلی ہونے سے کبھی پانی کی قلت محسوس نہیں ہوئی حتیٰ کہ موسم گرما میں پانی کی شدید قلت کے دوران ا کے پڑوسی بھی اس باؤلی سے پانی حاصل کرتے ہیں تاہم افسوسناک امر یہ ہے کہ اس خاتون کا ایک بھی بچہ اسکول نہیں جاتا جس سے ان کی معاشی مجبوری کا اظہار ہوتا ہ۔ اگرچیکہ زرینہ کی زندگی مصیبتوں میں گھری ہوئی ہے لیکن وہ دوسروں کو راحت ( مفت پانی ) فراہم کرنے میں پس و پیش نہیں کرتیں۔

TOPPOPULARRECENT