Friday , October 20 2017
Home / ہندوستان / ممبئی ٹرین دھماکوں کا مقدمہ اقل ترین سزا کیلئے خاطیوں کی جج سے درخواست

ممبئی ٹرین دھماکوں کا مقدمہ اقل ترین سزا کیلئے خاطیوں کی جج سے درخواست

ممبئی 14 ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) 2006 کے ممبئی ٹرین بم دھماکوں کے مقدمہ میں تمام 12 سزا یافتگان نے آج ٹرائیل عدالت سے درخواست کی کہ انہیں انسانی بنیادوں پر سزائے موت نہ دی جائے جبکہ عدالت میں ان خاطیوں کیلئے سزا کا تعین کرنے مباحث کا آغاز ہوگیا ہے ۔ 11 جولائی 2006 کو ممبئی کی سب اربن ٹرینوں میں ہوئے طاقتور بم دھماکوں میں کم از کم 188 افراد ہلاک ہوگئے تھے اور کئی دوسرے زخمی ہوئے تھے ۔ اس کیس میں جملہ 13 ملزمین کو گرفتار کیا گیا تھا جن کے منجملہ ٹرائیل عدالت نے گذشتہ ہفتے 12 کو خاطی قرار دیا تھا ۔ جن 12 افراد کو خاطی قرار دیا گیا ہے انہوں نے ایک تحریری بیان میں عدالت سے کہا کہ ان تمام ملزمین میں سدھار کے آثار دکھائی دیتے ہیں ایسے میں ان سے رحم کا معاملہ کیا جانا چاہئے ۔ ایک نامزد عدالت نے 11 ستمبر کو انہیں خاطی قرار دیا تھا ۔ جج یتین ڈی شنڈے نے آج سماعت کے دوران ہر خاطی کو شخصی طور پر اپنے سامنے طلب کیا اور انہیں دی جانے والی سزا کے تعلق سے ان کا زبانی بیان قلمبند کروایا ۔ کل استغاثہ کے وکلا اور وکلائے صفائی ہائیکورٹ اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کی روشنی میں اپنے اپنے دلائل پیش کرینگے ۔ خاطیوں نے ایک کے بعد دیگرے جج کے سامنے پیش ہوتے ہوئے کہا کہ انہیں انسانی بنیادوں پر کم سے کم سزا دی جانی چاہئے ۔ کچھ ملزمین نے اپنے رشتہ داروں اور افراد خاندان کی ذمہ داریوں کا اور کچھ نے حصول تعلیم کے ذریعہ خیالات میں بہتری کا عذر پیش کیا اور رحم کی خواہش کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT