Monday , October 23 2017
Home / ہندوستان / ممبئی کے مضافات میں خاتون آرٹسٹ اور وکیل کا قتل

ممبئی کے مضافات میں خاتون آرٹسٹ اور وکیل کا قتل

نعشیں گٹر میں دستیاب ہوئیں ، شوہر سے پوچھ تاچھ
ممبئی ۔ /13 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) مشہور مصور اور انسٹالیشن آرٹسٹ ہیما اپادھیائے اور ان کی وکیل ہریش بھمبانی کو ممبئی کے مضافات میں قتل کردیا گیا اور ان دونوں کی نعشیں ایک باکس میں دستیاب ہوئیں ۔ 43 سالہ ہیما اور 65 سالہ بھمبانی کے ہاتھ اور پیر رسیوں سے بندھے ہوئے تھے اور ان کی نعشیں ایک گٹرسے کل رات نکالی گئیں ۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ( ڈیٹکشن ) دھننجے کلکرنی نے یہ بات بتائی ۔ ایک پولیس عہدیدار نے اپنی شناخت مخفی رکھنے کی شرط پر کہا کہ ان کی نعشیں نیم برہنہ حالت میں تھیں ۔ پولیس نے اس قتل کے سلسلے میں ہیما کے شوہر چنتن اپادھیائے اور ان کے ڈرائیور کے خلاف گھریلو ملازمین سے پوچھ تاچھ کی ہے ۔ پولیس نے کہا کہ اس معاملے میں ابھی تک کسی کو حراست میں نہیں لیا گیا اور صرف ابتدائی تحقیقات کی جارہی ہے ۔ پولیس ان تمام سے سوالات کررہی ہے جو ہیما اور ان کی وکیل سے رابطہ میں تھے ۔ ان دونوں کی نعشیں کارڈ بورڈ کے باکس میں رکھ کر انہیں پلاسٹک کی شیٹ سے لپیٹ دیا گیا تھا ۔ پولیس نے بتایا کہ ان نعشوں کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھیج دیا گیا ہے اور رپورٹ کا انتظار ہے ۔ بڑودہ کی اس آرٹسٹ ہیما نے 2013 ء میں چنتن اپادھیائے کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا جس میں اس نے الزام عائد کیا تھا کہ چنتن ممبئی میں واقع ان کے مکان میں خواتین کی قابل اعتراض تصاویر بنایا کرتا ہے ۔ اس طرح انہیں ہراساں کررہا ہے ۔ اس مقدمہ میں وکیل بھمبانی ان (ہیما) کی پیروی کررہی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT