Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / ممتابنرجی کی ’’بی جے پی ہندوستان چھوڑدو ‘‘تحریک کا آغاز

ممتابنرجی کی ’’بی جے پی ہندوستان چھوڑدو ‘‘تحریک کا آغاز

Kolkata:TMC supremo and West Bengal Chief Minister Mamata Banerjee addresses the Martyrs' rally in Kolkata on Friday organised to commemorate the death of 13 Youth Congress workers killed in the Police firing in 1993. PTI Photo by Swapan Mahapatra (PTI7_21_2017_000193B)

میدینی پور (مغربی بنگال) ۔ 9 اگست (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر مغربی بنگال ممتابنرجی نے آج مرکزی حکومت پر جمہوریت کی اہمیت کم کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ وہ 2019ء کے لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کا دیس نکالا کرنے کیلئے اپوزیشن پارٹیوں کے ساتھ اتحاد کے ذریعہ جدوجہد کریں گی۔ ’’2019ء میں بی جے پی ہندوستان چھوڑ دے‘‘ کا نعرہ دیتے ہوئے ممتابنرجی نے الزام عائد کیا کہ بی جے پی ہندوستانی عوام کے بنیادی حقوق سلب کررہی ہے۔ سیکولرازم خطرہ میں ہے۔ مہم کا آغاز کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت ملک کے ٹکڑے ٹکڑے کرنا چاہتی ہے۔ ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے۔ 2019ء میں ’’بی جے پی ہندوستان چھوڑدو‘‘ کا نعرہ لگائیں گے۔ ہم دیگر اپوزیشن پارٹیوں کے ساتھ اتحاد کے ذریعہ بی جے پی کے خلاف متحدہ جدوجہد کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم فرقہ پرستی اور نفرت کی سیاست کا خاتمہ کرتے ہیں۔ ہم اس وقت تک نہیں رکیں گے جب تک کہ بی جے پی اقتدار سے بیدخل نہیں ہوجاتی۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت تمام رکاوٹوں پر قابو پاتے ہوئے آخرکار کامیاب رہے گی۔ مرکز ای ڈی انکم ٹیکس اور سی بی آئی استعمال کرتے ہوئے ہمیں خوفزدہ نہیں کرسکتا۔ مرکزی حکومت ان محکموں کی حکومت بن چکی ہے۔ انہوں نے کانگریس قائد احمد پٹیل کی گجرات میں کامیابی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کل رات بھر وہ جمہوریت اور آمریت کی جنگ کا مشاہدہ کرتی رہیں اور خوش ہیں کہ آخرکار جمہوریت کی فتح ہوئی۔ ممتابنرجی نے کہا کہ وہ آرجے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو کے 27 اگست کو پٹنہ میں جلوس میں شرکت کریں گی۔ انہوں نے بی جے پی پر الزام عائد کیا کہ وہ ملک کے آدی واسیوں اور سماج کے پسماندہ طبقات کیلئے مگرمچھ کے آنسو بہا رہی ہے۔ ایک طرف تو آدی واسیوں اور پسماندہ طبقات کے ارکان کو زدوکوب کرکے ہلاک کیا جاتا ہے۔ دوسری طرف آدی واسیوں کے ساتھ ان کے گھروںمیں ظہرانہ میں شرکت کی جاتی ہے۔ بیروزگاری بڑھتی جارہی ہے۔ یہ جی ایس ٹی کا زمانہ ہے۔ عوام کو جیل بھیج دیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT