Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ممتاز احمد خاں کا فرحت خاں کو پرسہ مثبت اقدام

ممتاز احمد خاں کا فرحت خاں کو پرسہ مثبت اقدام

اختلافات فراموش، نئی سیاسی تبدیلیوں کی قیاس آرائیاں
حیدرآباد۔یکم اپریل، ( سیاست نیوز) صدر مجلس بچاؤ تحریک ڈاکٹر قائم خاں کے انتقال پر کٹر حریف سمجھے جانے والے رکن اسمبلی یاقوت پورہ ممتاز احمد خاں کی جانب سے پرسہ دینے کا عام مسلمانوں کی جانب سے خیرمقدم کیا جارہا ہے۔ ممتاز احمد خاں جو امان اللہ خان صاحب مرحوم کے بااعتماد رفقاء میں شمار کئے جاتے تھے ان کے اس اقدام کو مستقبل میں نئی سیاسی تبدیلیوں کے طور پر دیکھا جارہا ہے۔ مجلس بچاؤ تحریک کے ایسے قائدین جو پارٹی کے قیام سے وابستہ ہیں انہیں ممتاز احمد خاں کی آمد اور لواحقین کو پرسہ دینے کو غیر معمولی تبدیلی تصور کررہے ہیں۔ مجلس بچاؤ تحریک کے قیام میں ممتاز احمد خاں کے کلیدی رول کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا۔ اس کے علاوہ دونوں خاندانوں کے اٹوٹ مراسم سیاسی اختلافات کے باوجود آج بھی برقرار ہیں۔ جناب امان اللہ خاں کے انتقال پر اولین پہنچنے والوں میں ممتاز خاں شامل تھے حالانکہ وہ مجلس میں شامل ہوچکے تھے۔ اگرچہ گزشتہ دو اسمبلی انتخابات میں فرحت اللہ خاں نے حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ سے ممتاز احمد خاں کے خلاف مقابلہ کیا تھا اور دونوں میں سخت اختلافات بھی پیدا ہوئے لیکن ڈاکٹر قائم خاں کے انتقال پر تمام اختلافات کو فراموش کرتے ہوئے ممتاز خاں نے جس وسیع القلبی اور اس خاندان سے اپنائیت کا اظہار کیا ہے اس کی ہر سطح پر ستائش کی جارہی ہے۔ کہیں ایسا تو نہیں کہ ممتاز احمد خاں 2019 اسمبلی انتخابات کیلئے اپنی نئی سیاسی حکمت عملی کو قطعیت دے رہے ہیں۔ حالیہ بلدی انتخابات میں بتایا جاتا ہے کہ مجلس نے ان کے فرزند کو ٹکٹ نہیں دیا۔ ممتاز احمد خاں چاہتے تھے کہ جس طرح انہوں نے کارپوریٹر سے سیاسی کیریئر کا آغاز کیا ان کے فرزند بھی بنیادی سطح سے سیاست میں قدم رکھیں۔ پرانے شہر میں اطلاعات گشت کررہی ہیں کہ ممتاز احمد خاں 2019 میں حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ سے اپنے فرزند کو ٹکٹ کے خواہاں ہیں۔ اگر پارٹی ان کے مطالبہ کو تسلیم نہیں کرے گی تو ممتاز احمد خاں دوبارہ اپنے دوست امان اللہ خاں مرحوم کے خاندان کے ساتھ ہوجائیں گے۔ صرف ممتاز خاں ہی نہیں بلکہ ان کے بھائی بھی امان اللہ خان خاندان سے کافی قریب ہیں۔ آج جلوس جنازہ اور مکہ مسجد میں یہی باتیں گشت کررہی تھیں کہ ممتاز احمد خاں آنے والے دنوں میں مجلس بچاؤ تحریک کے استحکام کا ذریعہ بن سکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT