Saturday , August 19 2017
Home / پاکستان / ’’مملکت بھی جماعت الدعوہ اور جیش محمد کیساتھ ملوث‘‘

’’مملکت بھی جماعت الدعوہ اور جیش محمد کیساتھ ملوث‘‘

عسکریت پسند تنظیموں کیخلاف کارروائی سے انکار ، پاکستانی صوبائی وزیر کا سنسنی خیز اعتراف
اسلام آباد۔ 18 مئی (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی پنجاب کے ایک صوبائی وزیر نے ایک چونکا دینے والا اعتراف کرتے ہوئے آج کہا کہ جماعت الدعوہ اور جیش محمد جیسی عسکریت پسند تنظیموں کے خلاف حکومت کوئی قانونی کارروائی نہیں کرسکتی کیونکہ ’’مملکت خود ان کے ساتھ ملوث ہے‘‘۔ پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے بی بی سی اُردوکو دیئے گئے ایک انٹرویو میں یہ انکشاف کیا جب ان سے دریافت کیا گیا تھا کہ آیا کس لئے ہندوستان کے مخالف گروپوں کے خلاف قانونی کارروائی کیوں نہیں کی جاتی جو حکومت سے بہت قریب سمجھے جاتے ہیں۔ رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ’’اگر موافق حکومت گروپوں سے آپ کا مطلب جماعت الدعوہ یا جیش محمد سے ہے تو یہ کہنے دیجئے کہ انہیں ممنوعہ تنظیمیں قرار دیا جاچکا ہے اور وہ اس صوبہ میں اپنی سرگرمیاں جاری نہیں رکھ سکتیں، تاہم وزیر قانون نے ان گروپوں کے خلاف قانونی کارروائی کا امکان مسترد کردیا اور کہا ’’آپ اس گروپ کے خلاف کیسے کارروائی کرسکتے ہیں جب مملکت (حکومت) خود ان کے ساتھ ملوث ہے‘‘۔ ہندوستان کا الزام ہے کہ پاکستان جماعت الدعوہ اور جیش محمد جیسی تنظیموں کو اس (ہندوستانی سرزمین) پر حملوں کیلئے استعمال کررہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT