Thursday , August 24 2017
Home / Top Stories / منشیات کیس : تلگوفلم ڈائرکٹر پوری جگناتھ سے ایس آئی ٹی کی 10گھنٹوں تک پوچھ گچھ

منشیات کیس : تلگوفلم ڈائرکٹر پوری جگناتھ سے ایس آئی ٹی کی 10گھنٹوں تک پوچھ گچھ

3مشہورکورئیر کمپنیوں ڈی ایچ ایل، بلیو ڈاٹ اور فیڈیکس کو نوٹس، تحقیقاتی ٹیم سے رجوع ہونے کی ہدایت
حیدرآباد۔/19جولائی، ( سیاست نیوز) سنسنی مچادینے والے منشیات معاملے میں خصوصی تحقیقاتی ٹیم ( ایس آئی ٹی) کے عہدیداروں نے 10 گھنٹوں تک فلم ڈائرکٹر پوری جگناتھ سے پوچھ تاچھ کی، پہلے منشیات اسکینڈل کے اصل ملزم کیلوین کے بارے میں لاعلمی کا اظہار کرنے والے پوری جگناتھ نے تصاویر، ٹیلی فون ریکارڈس اور بینک اکاؤنٹس سے فنڈس کی منتقلی کے ثبوت پیش کرنے کے بعد تحقیقاتی اداروں سے مکمل تعاون کیا۔ منشیات لینے کا ثبوت اکٹھا کرنے کیلئے ان کے خون کے نمونے بھی حاصل کئے گئے۔ کل یعنی 20جولائی کو کیمرہ مین شیام کے نائیڈو سے ایس آئی ٹی کے عہدیدار پوچھ تاچھ کریں گے۔ اکسائیز عہدیداروں نے ڈرگس سربراہ کرنے کے معاملے میں تین مشہور کوریئر کمپنیوں ڈی ایچ ایل، بلیو ڈاٹ اور فیڈیکس کو نوٹس جاری کرتے ہوئے انہیں تحقیقات کیلئے ایس آئی ٹی سے رجوع ہونے کی ہدایت دی۔ 10 گھنٹوں کی پوچھ تاچھ کے بعد اکسائیز انفورسٹمنٹ کے ڈائرکٹر اکون سبھروال نے کہا کہ تلگو فلموں کے ڈائرکٹر پوری جگناتھ سے ڈرگس کیس کے معاملے میں سیٹ کے عہدیداروں نے10 گھنٹوں تک پوچھ تاچھ کی اور سینکڑوں سوالات کئے۔ تحقیقات صحیح راہ پر جاری رہنے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ کل کیمرہ مین شیام کے نائیڈو کو صبح 10:30 بجے پوچھ تاچھ کیلئے طلب کیا گیا ہے۔ خصوصی ٹیم کے تحقیقاتی عہدیدار سرینواس راؤ نیے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پوری جگناتھ نے تحقیقات میں مکمل تعاون کیا ہے۔ انہوں نے بلڈ سائمپل ( خون کے نمونے ) بھی دیئے ہیں اور ساتھ ہی کئی اہم سراغ بھی دیئے ہیں جس پر مزید تحقیقات کی جائیں گی اور خون کے نمونوں سے متعلق رپورٹ وصول ہونے کے بعد سیٹ کی جانب سے میڈیا کو مکمل تفصیلات بتائی جائیں گی۔ دونوں شہروں حیدرآباد سکندراباد میں منشیات کا اسکینڈل منظر عام پر آجانے کے بعد ہلچل پیدا ہوگئی تھی۔ اکسائیز انفورسمنٹ کی خصوصی تحقیقاتی ٹیم ( ایس آئی ٹی ) نے ٹالی ووڈ کے 12 فلمی شخصیتوں کو نوٹس دیتے ہوئے پوچھ تاچھ کیلئے رجوع ہونے کی ہدایت دی تھی۔ نوٹس وصول کرنے والے فلم ڈائرکٹر پوری جگناتھ آج اپنے فرزند اور بھائی کے علاوہ وکیل کے ساتھ نامپلی میں واقع آبکاری بھون پہنچے۔

جس کی پانچویں منزل پر ایس آئی ٹی ٹیم کے عہدیداروں نے صبح 10-15 بجے سے شام 8-40 تک پوری جگناتھ پر سوالات کی بوچھار کردی۔ دوپہر میں آدھا گھنٹہ لنچ کا وقفہ دیا گیا۔ ابتداء میں پوری جگناتھ نے منشیات کیس کے اہم ملزم کیلوین کو پہچاننے سے انکار کردیا اور ڈرگس لینے کی بھی تردید کی ۔ جب ایس آئی ٹی کے عہدیداروں نے کیلوین کے ساتھ پارٹی میں موجود تصاویر اور ٹیلی فون پر بات چیت واٹس اَپ پر میسیجس کے ساتھ پوری جگناتھ کے بینک اکاؤنٹس سے کیلوین کے بینک اکاؤنٹس میں فنڈس منتقل کرنے کی تفصیلات بطور ثبوت پیش کی تو پوری جگناتھ چونک گئے۔ انہوں نے بعد میں کیلوین سے جان پہچان کا اعتراف کیا اور بتایا کہ ایک دوست نے انہیں ایونٹ مینجمنٹ کی ذمہ دار کی حیثیت سے کیلوین سے تعارف کروایا تھا اس کے علاوہ دو مرتبہ جب میں کیلوین سے ملاقات ہوئی تھی تب انھیں کیلوین کی جانب سے ڈرگس سربراہ کرنے کا علم ہوا تو انہوں نے اس سے دوری اختیار کرلی۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ پہلے ایک یا دو گرام کیلوین سے ڈرگس حاصل کرتے اس کے بعد 30تا40 گرام ڈرگس منگوانے پر پوری جگناتھ سے سوالات کئے۔ کیا آپ ڈرگس کا نشہ کرتے ہو یا فلم دنیا کی دوسری شخصیتوں کو ڈرگس سربراہ کرتے ہو؟۔ پوری جگناتھ نے منشیات استعمال کرنے یا دوسروں کو سربرا کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ وہ منشیات استعمال نہیں کرتے پھر بھی کیلوین سے ان کی جان پہچان ہے۔ جہاں تک بینک اکاؤنٹ سے رقم منتقل ہونے کا سوال ہے وہ انہوں نے فلم ایونٹ کیلئے کیلوین کے اکاؤنٹ میں رقم منتقل کیا تھا۔ واضح رہے کہ فلمی شخصیتوں سے منشیات کے معاملے میں تحقیقات کرنے سے قبل ایس آئی ٹی کے عہدیداروں نے اصل ملزم کیلوین اور اس کے دو ساتھیوں کو دو دن کی تحویل میں لیتے ہوئے پوچھ تاچھ کی تھی ان کے بیانات کی روشنی میں فلمی شخصیتوں سے پوچھ تاچھ کیلئے سوالات تیار کئے گئے تھے۔ اکسائیز انفورسمنٹ کے ڈائرکٹر اکون سبھروال نے پوری جگناتھ سے 10 گھنٹوں تک پوچھ تاچھ کرتے ہوئے ٹالی ووڈ اور عوام کو یہ پیغام دیا کہ منشیات کے خلاف سخت اقدامات کئے جانے والے ہیں۔ پوچھ تاچھ کی ویڈیو ریکارڈنگ بھی کی گئی تاکہ اس کو عدالت میں بطور ثبوت پیش کیا جاسکے۔ شام 7 بجے آبکاری بھون کو عثمانیہ ہاسپٹل سے میڈیکل ٹیم کو طلب کرلینے کے ساتھ ہی نارکوٹنگ کنٹرول بیورو کے عہدیدار بھی آبکاری بھون پہنچے جس سے پوری جگناتھ کے ارکان خاندان اور ان کے حامیوں میں گرفتار کرنے کے خدشات پیدا ہوگئے تاہم اکسائیز کمشنر چندرا ودن نے پوری جگناتھ کو گرفتار کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ پوچھ تاچھ کے بعد انہیں گھر جانے کی اجازت دی جائے گی۔ ضرورت پڑنے پر دوبارہ طلب کیا جائے گا۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ منشیات کے معاملہ میں اپنے آپ کو بے قصور قرار دینے والے پوری جگناتھ بعد میں ایس آئی ٹی کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جوابات میں پھنس گئے اور نہ چاہتے ہوئے بھی کئی انکشافات کئے جو منشیات کی تحقیقات میں بہت کارآمد ثابت ہوسکتے ہیں۔ 10 گھنٹوں کی پوچھ تاچھ کے بعد پوری جگناتھ میڈیا کے سامنا کرے بغیر ہی گاڑی میں بیٹھ کر گھر کیلئے روانہ ہوگئے۔

 

TOPPOPULARRECENT