Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / منیٰ میں بھگدڑ، 717 حجاج کرام جاں بحق

منیٰ میں بھگدڑ، 717 حجاج کرام جاں بحق

وادی منیٰ ۔ /24 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) حج کے  دوران وادی منیٰ میںآج ایک انتہائی افسوسناک سانحہ پیش آیا اور بھگدڑ کے نتیجہ میں 717 حجاج کرام جاں بحق ہوگئے جن میں4 ہندوستانی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ 860 سے زائد زخمی ہوئے ہیں ۔ یہ گزشتہ 25 سال کے دوران اب تک کا سب سے بڑا سانحہ تصور کیا جارہا ہے ۔ آج تقریباً 9 بجے صبح جب حجاج کرام رمی جمرات کے لئے جارہے تھے کہ اچانک بھگدڑ مچ گئی ۔ اس بھگدڑ کی وجوہات کا فوری طور پر پتہ نہیں چل سکا ۔
ہجوم اچانک تھم گیا
سعودی سیول ڈیفنس کے مطابق لین نمبر 204 اور لین نمبر 223 کے درمیان راستہ پر حجاج اپنی رفتار سے آگے بڑھ رہے تھے کہ اچانک وہ رک گئے اور وہ آگے نہیں بڑھ پارہے تھے  اس کے ساتھ ہی جمود کی کیفیت طاری ہوگئی اور بھگدڑ کے نتیجہ میں حجاج کرام جاں بحق ہوئے ۔ یہ حادثہ جس مقام پر پیش آیا وہاں عرب اور آفریقی ممالک کے خیمے واقع تھے ۔ ایک اور ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ سکیورٹی عملہ نے رکاوٹ کھڑی کردی تھی اور حاجیوں کا ایک ہجوم وہاں پہونچ کر سکیورٹی حصار کو توڑتے ہوئے آگے بڑھ گیا اور بھگدڑ کی کیفیت پیدا ہوگئی ۔
گرمی کی شدت
آج جس وقت یہ سانحہ پیش آیا انتہائی شدت کی گرمی تھی جس سے مسائل میں مزید اضافہ ہوا ۔ کئی حجاج کرام دم گھٹنے اور سن اسٹروک کے سبب جاں بحق ہوئے ہیں ۔ بعض زخمیوں کی حالت اس قدر خراب ہوگئی تھی کہ وہ بات کرنے کے بھی موقف میں نہیں تھے ۔ ان تمام کو قریبی ہاسپٹل منتقل کیا گیا ۔
دلخراش مناظر
آج پیش آئے سانحہ کے بعد انتہائی دلخراش مناظر دیکھنے میں آئے جہاں سڑک پر حجاج کرام کی نعشیں بکھری پڑی ہوئی تھیں ۔ کئی لوگ زخمی حالت میں تکلیف سے دوچار تھے اور سیول ڈیفنس عملہ کو زخمیوں کو ہاسپٹل منتقل کرتے ہوئے دکھایا گیا ۔ سانحہ کے بعد پولیس اور امبولینس کے سائرن کی آوازیں سنائی دیں اور زیادہ ہجوم کی وجہ سے بھی فوری زخمیوں تک پہونچنے میں مشکلات پیش آئیں۔سوشیل میڈیا پر بھی اس سانحہ کی تصاویر و ویڈیوز گشت کررہی تھیں۔
تحقیقات کا حکم
سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن نائف نے بھگدڑ کی تحقیقات کا حکم دیا ہے ۔ انہوں نے سعودی حج کمیٹی کے اجلاس کی صدرات کی اور کہا کہ تحقیقاتی رپورٹ شاہ سلمان کو پیش کی جائے گی جو مناسب کارروائی کریں گے ۔
چار ہندوستانی جاں بحق
جاں بحق ہونے والوں میں چار ہندوستانی شامل ہیں جن میں بی بی جان ، صبا تسنیم (حیدرآباد، تلنگانہ) ، محمد (تھرسور، کیرالا) شامل ہیں جبکہ ایک اور کی شناخت نہیں ہو پائی ہے ۔ آسام کے دو اور کیرالا کے ایک حاجی زخمی ہوئے ۔ جدہ میں قونصل جنرل نے بتایا کہ جاں بحق ہونے والوں کی قومیت کے بارے میں تفصیلات کا کل شام تک پتہ چل سکے گا ۔
ہیلپ لائن نمبرس
وزارت امور خارجہ نے بتایا کہ جدہ میں ہندوستانی مشن صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے ۔ اس کے علاوہ ہیلپ لائن نمبرس بھی دیئے گئے ہیں جو اس طرح ہیں : 00966125458000 اور 00966125496000 اس کے علاوہ سعودی عرب میں ٹول فری نمبر 8002477786 ہے ۔
ایران کے 90 حاجی جاں بحق
آج بھگدڑ کے دوران ایران کے 90 حاجی جاں بحق ہوگئے ۔ ایران حج تنظیم کے سربراہ سعید احدی نے یہ بات بتائی۔ نائب وزیر خارجہ حسین امیر عبدالایان نے قبل ازیں سعودی عرب کی حفاظتی پہلوؤں کے سلسلے میں کوتاہی کو اس سانحہ کی وجہ قرار دیا تھا ۔ سعودی عرب کے سفیر کو تہران میں طلب بھی کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT