Friday , April 28 2017
Home / Top Stories / منی پور میں ناگا باشندوں پر حملوں کے خلاف جوابی اقدام

منی پور میں ناگا باشندوں پر حملوں کے خلاف جوابی اقدام

پرتشدد واقعات کے بعد صورتحال میں بہتری اور کرفیو میں نرمی
کوہیما۔/20ڈسمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) ناگا اسٹوڈنٹس فیڈریشن نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ اسوقت تک منی پور جانے والی تمام گاڑیوں بشمول پاسنجر اور گڈس وھیکلس پر مکمل تحدیدات عائد کردی جائے تاوقتیکہ منی پور حکومت ، ریاست میں قیام پذیر ناگا عوام کی جان و مال کی حفاطت کیلئے واضح تیقن نہیں دیتی۔ این ایس ایف صدر سوہین تھنگ کیتھان نے آج یہ الزام عائد کیا ہے کہ منی پور میں سفر کرنے والے بے قصور ناگا باشندوں پر حملے ، ان کی گاڑیوں کو نذر آتش اور ساز وسامان ( لگیج ) کو نقصان پہنچایا جارہا ہے۔ گذشتہ چند دنوں سے شاہراہوں میں اس طرح کے واقعات عام ہوگئے ہیں جبکہ 18 ڈسمبر کو امپھال ۔ اکھرول روڈ پر ایک ہجوم نے 22 گاڑیوں کو آگ لگادی تھی جس کے جواب میں ناگا اسٹوڈنٹس فیڈریشن نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ منی پور کی گاڑیوں بشمول پاسنجر اور گڈس وھیکلس کی آمد ورفت پر مکمل پابندی عائد کردی گئی ہے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ جو بھی لوگ ناگا بستیوں سے منی پور کی سمت سفر کریں گے کسی بھی جوکھم کے وہ خود ذمہ دار ہوں گے۔ تاہم کیتھان نے کہا کہ طلباء کو یہ سہولت رہے گی کہ یونیورسٹیوں سے منی پور واپس جاسکتے ہیں۔ واضح رہے کہ یونائٹیڈ ناگا کونسل نے یکم نومبر سے منی پور میں قومی شاہراہوں کی معاشی ناکہ بندی کردینے کے باعث اشیاء ضروریہ کی سربراہی مسدود ہوگئی ہے جبکہ یو این سی نے صدر ہلز اور چیرہم کو مکمل درجہ کے ضلع میں تبدیل کرنے سے متعلق حکومت منی پور کے فیصلہ کے خلاف احتجاج شروع کیا

اور یہ ادعا کیا کہ ریاست میں ناگا قبائیل کی اراضیات کو تقسیم کرنے کی سازش ہے۔دریں اثناء امپھال سے موصولہ اطلاعات کے بموجب منی پور میں امن و قانون کی صورتحال میں بہتری کے پیش نظر حکومت نے امپھال مغربی و مشرقی اضلاع میں آج صبح کرفیو میں 9گھنٹوں کی ڈھیل دی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دونوں اضلاع کے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے صبح 9.30 بجے سے کرفیو میں نرمی کے احکامات جاری کئے ہیں۔ امپھال ۔ اکھرول روڈ پر 22 مسافر گاڑیوں کو آگ لگادینے کے بعد امپھال ایسٹ سڑک میں اتوار کی شام سے غیر معینہ کرفیو نافذ کردیا گیا جبکہ امپھال ویسٹ ڈسٹرکٹ میں صرف رات کے اوقات ( شام تا صبح ) کرفیو نافذ العمل ہے۔ چیف منسٹر او ایبوبی سنگھ نے آج ریاست کی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے کابینہ کا اجلاس طلب کیا ہے کیونکہ یونائٹیڈ ناگا کونسل کی جانب سے یکم نومبر سے 2 اہم شاہراہوں کی ناکہ بندی کردینے سے حالات بگڑتے جارہے ہیں اور اشیائے ضروریہ کی قلت سے عوام مشکلات سے دوچار ہیں۔قبل ازیں چیف منسٹر نے 3 پولیس ملازمین کے لواحقین کیلئے 20لاکھ روپئے کی امداد منظور کی ہے جنہیں 15 ڈسمبر کو عسکریت پسندوں نے گھات لگاکر ہلاک کردیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT