Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / منی پور کے حالات پر مرکز کا اظہار تشویش

منی پور کے حالات پر مرکز کا اظہار تشویش

اقتصادی ناکہ بندی کے خلاف کارروائی پر زور
امپھال، 23 دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی مملکتی وزیر داخلہ کرن رجیجو نے آج کہا کہ اقتصادی ناکہ بندی کو فوری طور پر ختم کیا جانا چاہئے کیونکہ اس کی وجہ سے منی پور میں انسانی بحران پیدا ہو گیا ہے۔ مسٹر رجیجو نے یہاں ریاستی سکریٹریٹ میں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ آج صرف اس مقصد سے منی پور آئے ہیں کہ تمام لوگوں کو بنیادی سہولیات مل سکے ۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کو کسی بھی وجہ سے تکلیف نہیں ہونی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ مرکز یونائیٹڈ ناگا کونسل (یو این سی) کی طرف سے ہڑتال پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دو قومی شاہراہوں کو خالی کرانے میں ریاستی حکومت کی مدد کے لئے مرکزی فورسز کی 150 کمپنیاں اور دیگر سات آنے والی ہیں۔ یہ شاہراہ منی پور کو ملک کے دیگر حصوں سے جوڑتے ہیں۔مسٹر رجیجو نے کہا کہ قانون و انتظام کو برقرار رکھنا ریاست کی ذمہ داری ہے اور ریاستی حکومت کے پاس یہ یقینی بنانے کی تمام طاقتیں ہیں کہ قومی شاہراہوں کو تمام رکاوٹوں سے پاک کرایا جا سکے ۔ تمام قومی شاہراہوں پر آمد و رفت ہونی چاہئے اور کسی سیاسی مقصد کے لئے لوگوں کو پریشان نہیں کیا جانا چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ منی پور میں اگرچہ کانگریس اور مرکز میں بی جے پی برسر اقتدار ہے لیکن دونوں پارٹیوں کے درمیان ریاست میں امن قائم کرنے اور قومی شاہراہوں پر گاڑیوں کی بہ آسانی نقل و حرکت کرنے میں کوئی اختلاف نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ این ایس سی این (آئی ایم) کو قانون کو توڑنے کی اجازت نہیں دی جائے گی کیونکہ اس نے مرکزی حکومت کے ساتھ ایک معاہدہ پر دستخط کئے ہیں۔ مسٹر رجیجو نے کہا کہ ریاست میں پہنچنے کے فوراً بعد انہوں نے وزیر اعلی اوکرام ابوبی، نائب وزیر اعلی گیئ کھانگم اور دیگر کے ساتھ تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت نے این ایس سی این (آئی ایم) کے خلاف ریاستی پولیس فورسز اور سرکاری مقامات کو نشانہ بنانے کے لئے کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT