Monday , October 23 2017
Home / ہندوستان / مواضعات کو ترقی دینے مودی کی اپیل بے اثر

مواضعات کو ترقی دینے مودی کی اپیل بے اثر

15 کے منجملہ 9مواصغات کو ترقی دینے میں غیر بی جے پی ارکان سرفہرست
نئی دہلی ۔23 اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے حلف لینے کے بعد ارکان پارلیمنٹ سے اپیل کی تھی کہ وہ مواضعات کو ترقی دینے کیلئے ہر ایک موضع کو اختیار کرلیں، اس اپیل کے دو سال بعد رپورٹ تیار کی گئی ہے ۔ اس کے مطابق 15مواضعات کو ترقی دینے کیلئے جن ارکان پارلیمنٹ نے اپنایا تھا ان کے منجملہ 9 مواضعات کو غیربی جے پی ارکان پارلیمنٹ نے ترقی دی ہے ۔ حکمراں پارٹی بی جے پی کے ارکان پارلیمنٹ پر اپنے وزیراعظم کی اپیل کا خاص اثر نہیں ہوا۔ وزارت دیہی ترقی کی جانب سے تیار کردہ فرسٹ رپورٹ کارڈ کے مطابق سرفہرست 15 ارکان پارلیمنٹ میں سے 9 کا تعلق غیربی جے پی پارٹیوں سے ہے ۔ ان ارکان پارلیمنٹ نے اپنے اختیار کردہ مواضعات کو ترقی دی ہے اور عوام کی سماجی بہبودی پروگرام پر بہتر انداز میں عمل آوری کی ہے ۔ ان بہبودی اقدامات میں پینے کے پانی کی سربراہی ، معذور اور بیواؤں کو وظائف ، اسکول میں بچوں کے داخلوں کو یقینی بنایا گیا ۔ مواضعات کو برقیانے اور مڈڈے میل اسکیم کو اچھے طریقہ سے جاری رکھا گیا۔ اگرچیکہ نریندر مودی نے جیاپور کو اپنے حلقہ وارانسی میں عالمی نقشہ پر لانے کا وعدہ کیا تھا لیکن یہ موضع ہنوز اس وعدہ کی تکمیل کا منتظر ہے ۔ سنسد آدرش گرام یوجنا کے پہلے مرحلہ میں 702 ارکان پارلیمنٹ نے مواضعات کو اپنالیا تھا اور ان میں 646 نے ولیج ڈیولپمنٹ پلان پیش کیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT