Thursday , October 19 2017
Home / Top Stories / موجودہ امریکی انتظامیہ ناکام ، ریپبلکن امیدوار ٹرمپ کا دعویٰ

موجودہ امریکی انتظامیہ ناکام ، ریپبلکن امیدوار ٹرمپ کا دعویٰ

ٹرمپ اقتدار ہر چیز کیلئے جوکھم بڑھا دے گا، ہلاری کا جوابی وار۔ صدارتی رائے دہی سے قبل پرجوش انتخابی مہم
واشنگٹن ۔ 8 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ریپبلکن صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ نے الزام عائد کیا ہیکہ ’’ناکام سیاسی انتظامیہ‘‘ نے کچھ ہی مفید کام نہیں کیا سوائے اس کے کہ وطن میں غربت بڑھا دی اور سمندر پار تباہی کا مؤجب بنا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اب میڈیا اور بعض نام نہاد سیاسی خاص گوشوں کو مسترد کردینے کا وقت ہے جنہوں نے ملک کو ناکامی کی طرف ڈھکیل دیا۔ وہ فلوریڈا میں گذشتہ روز اپنی انتخابی مہم کے دوران حامیوں سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ سیاسی نظم و نسق ناکام ہے جس نے ایسا کوئی مفید کام نہیں کیا جس سے امریکی عوام کو فائدہ پہنچے بلکہ اس نے غربت بڑھائی اور بیرون ملک تباہی لائی۔ اب  ایسے انتظامیہ کو مسترد کردینے کا وقت آ چکا ہے۔ امریکی صدارتی انتخابات میں رائے دہی سے ایک روز قبل ریپبلکن پارٹی اور ڈیموکریٹک پارٹی دونوں کے حریف امیدواروں ڈونالڈ ٹرمپ اور ہلاری کلنٹن نے اپنے اپنے حامیوں کے ساتھ انتخابی ریالیاں منعقد کئے۔ تازہ سروے کے مطابق ہلاری کو اپنے حریف ٹرمپ پر 4 پوائنٹس کی برتری حاصل ہے لیکن ان کیلئے سب سے بڑا مسئلہ ان لوگوںکو پولنگ بوتھ تک لانا ہے جو ووٹ ڈالنے کے خواہاں ہی نہیں ہے۔ فلوریڈا کی ریالی میں ٹرمپ نے کہا کہ امریکی عوام کی پرواہ کئے بغیر ناکام سیاسی نظام پھلتا پھولتا رہا،

جسے اب شکست دینے کا وقت آ چکا ہے۔ دوسری طرف ہلاری نے پنسلوانیا میں اپنے حامیوں سے خطاب میں کہا کہ عوام کو اپنے اپنے خاندان کے مستقبل کو ذہن میں رکھتے ہوئے ووٹ دینا چاہئے کیونکہ جب وہ رائے دہی میں حصہ لیں گے تو ان کا ووٹ کسی شخصیت کے حق میں نہیں بلکہ مسائل کی حمایت میں ہوگا۔ ہلاری نے مشی گن کی الیکشن ریالی میں کہا کہ ٹرمپ کو اقتدار حاصل ہوجانے کی صورت میں ہر چیز کا جوکھم بڑھ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کا مستقبل داؤ پر لگا ہے کیونکہ یہ الیکشن طاقتور قیادت اور کمزور سیاسی نظام کے درمیان لڑا جارہا ہے۔ اس الیکشن کو فیصلہ کن اور تاریخ ساز قرار دیتے ہوئے ہلاری نے دعویٰ کیا کہ وہ عہدہ صدارت کو حاصل تمام تر اختیارات کو بروئے کار لانے میں حد درجہ احتیاط اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس الیکشن میں کلیدی اقدار کی آزمائش ہورہی ہے لیکن ملک کے مستقبل کے تعلق سے انہیں ٹرمپ اقتدار کی صورت میں تشویش لاحق ہوگی۔ بصورت دیگر امریکی مستقبل محفوظ رہے گا۔

نوکری پر ٹرمپ کے پاس کوئی منصوبہ نہیں : اوباما
اس دوران امریکی صدر براک اوباما نے ریپبلکن صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ پر شدید تنقید میں کہا کہ وہ نوکریوں کے بارے میں کوئی ٹھوس حکمت عملی سے عاری ہیں اور اس کے سواء وہ کچھ نہیں کہتے کہ موجودہ صورتحال تباہ کن ہے۔ اوباما نے گذشتہ روز نیو ہمپشائر میں منعقدہ الیکشن ریالی سے خطاب میں کہا کہ ٹرمپ کے پاس نوکریوں کے تعلق سے کوئی سنجیدہ حکمت عملی نہیں ہے۔ نیوہمپشائر یکایک اہمیت کی حامل ریاست بن چکی ہے جہاں ہلاری کلنٹن کے حق میں زوروشور سے مہم چلائی گئی۔ اوباما نے کہا کہ اگر ہلاری نہیں جیت پاتی ہیں تو امریکہ کیلئے منفی تبدیلی ہوگی۔ دریں اثناء لاس اینجلس میں ٹرمپ کی تائید میں سافٹ ویر روبو کو استعمال کرتے ہوئے فرضی ٹوئٹس سوشل نیٹ ورک پر عام کردیئے جانے کی اطلاعات ہیں۔

TOPPOPULARRECENT