Wednesday , October 18 2017
Home / کھیل کی خبریں / موجودہ کھلاڑیوں کیلئے انفرادی ریکارڈس سے زیادہ ٹیم کی کامیابی اہم : کوہلی

موجودہ کھلاڑیوں کیلئے انفرادی ریکارڈس سے زیادہ ٹیم کی کامیابی اہم : کوہلی

کوہلی نے اظہرالدین کا ریکارڈ مساوی کرلیا

ممبئی ۔13 ڈسمبر۔(سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی کرکٹ ٹیم نوجوان کپتان ویراٹ کوہلی کی قیادت میں یکے بعد دیگرے ٹسٹ مقابلوں میں فتوحات حاصل کرتے ہوئے نئے ریکارڈس کی سمت گامزن ہے ۔ ممبئی میں انگلینڈ کے خلاف ٹسٹ اور سیریز میں کامیابی کے ساتھ ویراٹ کوہلی نے سابق کپتان محمد اظہرالدین کے ریکارڈ کی برابری کرلی ہے ۔ محمد اظہرالدین کی قیادت میں 1992-93 ء میں ہندوستانی ٹیم نے متواتر تین ٹسٹ مقابلے کولکتہ ، چینائی اور ممبئی میں اپنے نام کئے تھے ۔ اسی طرح اب کوہلی کی قیادت میں ہندوستانی ٹیم نے وشاکھاپٹنم ، موہالی اور ممبئی میں متواتر تین فتوحات کا ریکارڈ بنالیاہے ۔ ویراٹ کوہلی نے اس شاندار کامیابی کے بعد اظہارخیال کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ ٹیم میں انفرادی ریکارڈس کی بجائے ٹیم کے مظاہروں اور کامیابی پر توجہ مرکوز ہے۔ کوہلی نے واضح کیا کہ ان کی قیادت کی کامیابی کی ایک اہم وجہ موجودہ کھلاڑیوں کی جانب سے انفرادی ریکارڈس کی بجائے ٹیم کی کامیابی کو اہمیت دینا اہم ہے ۔

انھوں نے کہاکہ ٹیم کے کھلاڑیوں نے میزبان ٹیم کی جانب سے کئی مرتبہ دباؤ میں رکھنے کے باوجود بہتر مظاہرے کئے ہیں اور کھلاڑیوں کی جانب سے جو سخت محنت کی گئی اس کا نتیجہ حاصل ہوا ۔ چار مقابلوں میں تین مرتبہ ٹاس ہارنے کے باوجود جس طرح ٹیم نے مقابلوں میں واپسی کی وہ کھلاڑیوں کی انفرادی ریکارڈس کی بجائے ٹیم کی کامیابی میں اہم رول ادا کرنے کی خواہش کو ظاہر کرتا ہے ۔ واضح رہے کہ ہندوستان نے روی چندرہ اشون اور کپتان ویرات کوہلی کی فتح گر کارکردگی کی بدولت انگلینڈ کو چوتھے ٹسٹ میچ میں اننگز اور 35 رنز سے شکست دے کر سیریز اپنے نام کر لی۔میچ کے پانچویں دن انگلینڈ نے 182 رنز چھ کھلاڑی آؤٹ سے اپنی نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی تو اسے انگلش ٹیم کی بساط لپیٹنے میں زیادہ دیر نہ لگی۔

اشون نے بہترین بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسکور میں تین رنز کے اضافے پہلے جونی بیئراسٹو کو پویلین لوٹایا جو 51 رنز کی اننگز کھیل کر پویلین لوٹے۔اسپنر نے مزید دس رنز کے اضافے سے باقی تینوں وکٹیں بھی حاصل کر کے انگلینڈ کی ٹیم کو 195 رنز پر ڈھیر کردیا اور ہندوستان کو اننگز اور 36 رنز کی یادگار فتح سے ہمکنار کرا دیا۔میچ کے پانچویںدن ہندوستان کو کامیابی کیلئے محض آٹھ اوورز کا انتظار کرنا پڑا اور اس کامیابی کی بدولت میزبان ٹیم نے سیریز بھی 3-0 سے اپنے نام کر لی ہے اور آخری مقابلہ ہنوز باقی ہے جو کہ چینائی میں 16 ڈسمبر سے کھیلا جانا ہے لیکن موجودہ موسم اور وہاں کے سیاسی حالات کے تناظرمیں اس کے مقام کی تبدیلی کا امکان خارج از امکان نہیں۔یہ 2008 کے بعد انگلینڈ کے خلاف ہندوستان کی پہلی ٹسٹ سیریز میںکامیابی ہے۔اشون نے ایک مرتبہ پھر بہترین بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے چھ وکٹیں لے کر میچ میں مجموعی طور پر 12 وکٹیں حاصل کیں۔کوہلی کو 235 رنز کی شاندار اننگز پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT