Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / مودی ترنمول کانگریس کیخلاف سی بی آئی کو استعمال کرنے کوشاں

مودی ترنمول کانگریس کیخلاف سی بی آئی کو استعمال کرنے کوشاں

الیکشن کمیشن بھی موردِ الزام ۔ بی جے پی، کانگریس اور سی پی آئی (ایم) بھی ساتھ ہوجائیں تو ہمیں خوف نہیں : ممتا بنرجی
کولکاتا ، 16 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی نے آج وزیراعظم نریندر مودی اور بی جے پی کو ترنمول کانگریس کے خلاف سی بی آئی اور ای ڈی کو استعمال کرنے کی کوشش کا موردِ الزام ٹھہرایا کیونکہ وہ ان کے خلاف زبان کھولنے والی پارٹی ہے، نیز یہ الزام بھی عائد کیا کہ الیکشن کمیشن بی جے پی کی ہدایات پر کام کررہا ہے۔ ترنمول کانگریس کی سربراہ نے وسطی کولکاتا کے ستیہ نارائن پارک میں منعقدہ پارٹی ریلی سے خطاب میں کہا: ’’اگر مودی، بی جے پی، کانگریس اور سی پی آئی (ایم) بھی ہاتھ ملا لیں تو مجھے اُن سے کچھ خوف نہیں۔ اگر آپ چاہیں تو سی بی آئی اور ای ڈی کو استعمال کرسکتے ہو۔ ہر دن تم سب ہماری توہین کئے جارہے ہو۔ میں یہ برداشت نہیں کروں گی، میں اس طرح کے حملوں کا جواب دوں گی۔ سی پی آئی (ایم)، کانگریس، بی جے پی مودی جی کے ساتھ مل کر ہمیں تکلیف پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ وہ ہمیں اذیت دے رہے ہیں۔ میں دہلی سے خائف نہیں ہوں،

مجھے کانگریس کا خوف نہیں، میں سی پی آئی (ایم) سے بھی پریشان نہیں، مجھے مودی جی کا بھی کچھ خوف نہیں ہے۔‘‘ انھوں نے کہا کہ بی جے پی بھلے ہی دہلی میں برسراقتدار ہے لیکن اس سے انھیں ہماری توہین کرنے اور ہم کو اذیت پہنچانے کا حق نہیں مل جاتا ہے۔ ممتا بنرجی نے الزام عائد کیا کہ الیکشن کمیشن بی جے پی کی ہدایات پر کام کررہا ہے۔
الیکشن کمیشن کی نوٹس پر ممتا کا جواب داخل
اس دوران چیف منسٹر ممتا بنرجی نے الیکشن کمیشن کی نوٹس پر آج اپنا جواب داخل کردیا۔ کمیشن کی نوٹس میں کہا گیا تھا کہ ممتا بنرجی نے مغربی بنگال میں جہاں ریاستی اسمبلی کے انتخابات جاری ہیں، ایک نئے ضلع کی تشکیل کا اعلان کرتے ہوئے بادی النظر میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی ہے۔ کمیشن کے ذرائع نے کہا کہ ترنمول کانگریس لیڈر نے وجہ بتاؤ نوٹس کا جواب دے دیا، جس پر منگل کو فیصلہ ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT