Friday , August 18 2017
Home / سیاسیات / مودی جی ! ہماری بات سنیں طالب علم کی کانوکیشن میں توجہ دہانی پر تھپڑ رسید

مودی جی ! ہماری بات سنیں طالب علم کی کانوکیشن میں توجہ دہانی پر تھپڑ رسید

واراناسی ۔ 22 فبروری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )بنارس ہندو یونیورسٹی کانوکیشن میں آج اس وقت گڑبڑ شروع ہوگئی جب ایک نوجوان نے آواز اُٹھاتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی سے خواہش کی کہ وہ طلبہ کی بات سنیں ، لیکن وہاں موجود دیگر افراد نے اسے تھپڑ رسید کردیا۔ پولیس نے اس نوجوان کو فوری حراست میں لے لیا۔ یہ یونیورسٹی کے بی اے سال دوم کا طالب علم ہے اور اس کی اشوتوش سنگھ کے نام سے شناخت کی گئی ۔ وزیراعظم نریندر مودی جیسے ہی اپنی تقریر ختم کرکے شہ نشین سے نیچے اُتر رہے تھے اشوتوش سنگھ نے چیخ کر کہا مودی جی ! مہربانی کرکے آپ طلبہ برادری کی آواز کو سنیں ۔ پولیس نے فوری اس نوجوان کو حراست میں لے لیا اور اس کی بات وزیراعظم تک نہیں پہونچ پائی کیونکہ وہ اور دیگر مہمانان کی گیلری تقریباً کئی سو میٹر دور واقع تھی ۔ بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اشوتوش سنگھ نے کہاکہ وہ وزیراعظم کو یہ بتانا چاہتا تھا کہ بنارس ہندو یونیورسٹی میں اسٹوڈنٹس یونین پر طویل عرصہ سے امتناع عائد ہے اور یونیورسٹی حکام امتناع برخواست کرنے میں پس و پیش کررہے ہیں۔ اس نے کہا کہ وہ وزیراعظم کو یادداشت پیش کرنا چاہتا تھا لیکن یونیورسٹی حکام نے اجازت نہیں دی۔

TOPPOPULARRECENT