Wednesday , July 26 2017
Home / سیاسیات / مودی حکومت دانشوروں کی دشمن : چدمبرم

مودی حکومت دانشوروں کی دشمن : چدمبرم

ریزرو بینک نے نوٹوں کی منسوخی کا مشورہ نہیں دیا
نئی دہلی 3 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی حکومت کو جی ڈی پی اعداد و شمار پر ماہرین سے سوال کرتے ہوئے خود کو دنیا کی بدترین دانشوروں کی دشمن ثابت کردیا ہے۔ سابق وزیر فینانس پی چدمبرم نے آج کہا ہے کہ نوٹ بندی کے اثرات سے باہر نکلنے کے لئے ملک کی معیشت کو 12 تا 18 ماہ درکار ہوں گے۔ اگر حکومت یہ سوچتی ہے کہ امرتیہ سین پروفیسر ہاورڈ یونیورسٹی کسی بھی احترام کے حقدار نہیں ہیں تو اِس کا مطلب یہ ہوا کہ مودی حکومت آکسفرڈ ، کیمبرج اور ہاورڈ تمام کو ناکارہ سمجھتی ہے۔ یہاں ایک سمینار سے خطاب کرتے ہوئے چدمبرم نے حکومت پر شدید تنقید کی جو ماہرین معاشیات جیسے نوبل انعام یافتہ امرتیہ سین پر لعن طعن کررہی ہے جنھوں نے حکومت کی پیداوار سے متعلق دعوے پر سوال اُٹھایا تھا۔ چدمبرم نے آج کہا کہ حکومت نے نوٹوں کی منسوخی کا فیصلہ ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی)کے مشورہ پر نہیں کیا گیا تھا بلکہ یہ فیصلہ اس پر مسلط کیاگیا تھا جس کا خمیازہ ہماری معیشت کو اگلے مالی سال میں بھی جھیلنا پڑے گا۔ چدمبرم نے کانگریس محکمہ قانون کی طرف سے نوٹوں کی منسوخی اور معیشت پر اس کے اثرات کے بارے میں یہاں منعقد سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے دعوی کیا کہ حکومت نے ریزرو بینک کوسات نومبر کو اپنے اس فیصلے کے بارے میں اطلاع دی۔ اس سے پہلے بینک سے نوٹو ں کی منسوخی کے بارے میں کوئی صلاح و مشورہ نہیں کیا گیا اور ریزرو بینک پر نوٹوں کی منسوخی کا فیصلہ مرکزی حکومت کے ذریعہ مسلط کیا گیا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT