Saturday , October 21 2017
Home / دنیا / مودی حکومت رواداری کے نظریات کو عملی روپ دے : امریکہ

مودی حکومت رواداری کے نظریات کو عملی روپ دے : امریکہ

واشنگٹن۔15اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک اعلی سطحی امریکی سفارتکار برائے مذہبی آزادی ڈیویڈ سیپرسٹین نے کہا کہ امریکہ مودی حکومت کی ’’رواداری اور تہذیب‘‘ کے نظریات کو عملی روپ دینے کی حوصلہ افزائی کرے گا۔ وزیراعظم نریندر مودی نے چند دن قبل دادری سانحہ کے پس منظر میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی اپیل کی تھی۔ بڑے گوشت پر تنازعہ کے بعد وزیراعظم نے تہذیب اور رواداری برقرار رکھنے کی مختلف فرقوں سے اپیل کی تھی۔ امریکی سفیر برائے بین الاقوامی مذہبی آزادی ڈیویڈ سیپرسٹین نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ مودی حکومت ملک گیر سطح پر رواداری اور تہذیب کے نظریات کو فروغ دے۔ ہندوستان کے شعبہ کے بارے میں مذہبی آزادیوں کے زیر عنوان امریکی رپورٹ میں 26 مئی تک یو پی اے دور حکومت کا احاطہ بھی کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ 2014ء میں ہندوستان میں مذہبی مقاصد کے تحت ہلاکتیں، گرفتاریاں، فسادات اور جبری مذہبی تبدیلی کے واقعات دیکھے گئے۔ بعض معاملات میں پولیس فرقہ وارانہ تشدد پر موثر ردعمل ظاہر کرنے میں ناکام رہی۔ انہوں نے کہا کہ ہم تخمینہ نہیں کررہے ہیں۔ ہم نے صرف حقائق پیش کئے ہیں۔ انہوں نے یہ کہا کہ وہ کہنا چاہتے ہیں کہ یہ رپورٹ خود زبان حال سے اپنی ترجمانی کرے گی۔ سیپرسٹین نے واضح طور پر مودی حکومت کے تحت مذہبی آزادی کے بارے میں تبصرہ کیا۔ تاہم اعلی امریکی سفارتکار برائے بین الاقوامی مذہبی آزادی نے سری فورٹ کی تقریر کا حوالہ دیا جس میں صدر امریکہ بارک اوباما نے مذہبی آزادی اور رواداری کی اہمیت پر زور دیا تھا جبکہ وہ جنوری میں نئی دہلی کا دورہ کررہے تھے۔ سیپرسٹین نے کہا کہ ملک کی فلاح و بہبود اسی میں ہے کہ ان مسائل کی یکسوئی کی جائے۔ صدر امریکہ بارک اوباما نے ہندوستان میں ملک گیر سطح پر مذہبی خطوط پر صف آرائی دیکھی تھی۔ اسی لئے انہوں نے اپنی تقریر میں رواداری اور تہذیب کی اہمیت پر زور دیا تھا۔ سیپرسٹین نے کہا کہ ہم حکومت ہند پر زور دیتے ہیں کہ وہ ایسے اقدامات کرے جن کے ذریعہ ایسے حالات سے گریز کیا جاسکے جن کے نتیجہ میں تشدد برپا ہوتا ہے۔ اقلیتی فرقہ بعض علاقوں میں مخدوش حالت میں ہے۔ انہیں تحفظ فراہم کیا جانا چاہئے۔ دادری میں زدوکوب کے ذریعہ ہلاک کردینے کے واقعہ کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی گزشتہ ہفتہ فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور اخوت پر زور دے چکے ہیں۔ وہ کہہ چکے ہیں کہ ہندوئوں اور مسلمانوں کو متحد ہوکر اپنے مشترک دشمن غربت کے خلاف جنگ کرنا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT