Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / مودی حکومت میں جمہوریت تاریک ترین دور سے گزر رہی ہے

مودی حکومت میں جمہوریت تاریک ترین دور سے گزر رہی ہے

قومی سلامتی کی آڑ میں سیول سوسائٹی نشانہ، فوجی جوانوں کا استحصال، مخصوص کارپوریٹ اداروں کو فوائد: راہول گاندھی

نئی دہلی۔7 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) راہول گاندھی نے مودی حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جمہوریت اپنے تاریک ترین دور سے گزررہی ہے۔ حکمراں جماعت اقتدار کی لالچی اور ان سب کو ختم کرنا چاہتی ہے جو اس سے اتفاق نہیں کرتے۔ کانگریس صدر سونیاگاندھی کی غیر موجودگی میں کانگریس ورکنگ کمیٹی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قومی سلامتی کی آر میں چھپ کر سیول سوسائٹی کو سوالات کرنے پر دکھایا جارہاہ ے۔ ہندی چینل این ڈی ٹی وی انڈیا پر ایک روزۃ امتناع کے حوالے سے راہول گاندھی نے کہا کہ ٹی وی چینلس کو سزاء دی جارہی ہے اور انہیں بند کرنے کے لئے کہا جارہا ہے۔ اپوزیشن جب حکومت کو جوابدہ بنائے تو اسے گرفتار کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ دور میں جمہوریت انتہائی تاریک وقت سے گزررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اختیارات کا بے جا استعمال بنیادی آزادی کو کچلنے کی حکومت جتنی بھی کوشش کرے گی اتنا ہی کانگریس کا ایسے ناپاک عزائم کو شکست دینے کا عزم مستحکم ہوگا۔ حکومت کو جن سوالات پر زیادہ پریشانی ہے اور جن کا اس کے پاس کوئی جواب نہیں ، ایسے سوالات ہمیں ہر فورم میں اٹھانے چاہئیں۔ بالخصوص پارلیمنٹ کے مجوزہ سیشن میں حکومت کی ناکامیوں کو بے نقاب کیا جائے۔ پارلیمنٹ کا سرمائی سیشن 16 نومبر سے شروع ہورہا ہے۔ راہول گاندھی جو گزشتہ چند دن سے ایک عہدہ ایک پنشن مسئلہ اٹھارہے ہیں، کہا کہ حالیہ چند ماہ میں ہمارے جوانوں کو کئی دہوں میں اب تک کا سب سے زیادہ نقصان ہوا ہے۔ ان کے ساتھ موجودہ حکومت ظالمانہ رویہ اختیار کئے ہوئے ہے۔ انہیں او آر او پی سے محروم کیا جارہا ہے اور معذوری پنشن کو ختم کیا جارہا ہے۔ کانگریس ورکنگ کمیٹی اجلاس میں مجوزہ اسمبلی انتخابات کے تعلق سے ایکشن پلان بھی تیار کیا گیا۔ راہول گاندھی نے کہا کہ مودی حکومت غلط اطلاعات پر مبنی مہم چلا سکتی ہے اور ذات پات و مذہبی مسائل کا استحصال کرتے ہوئے سماج میں تفریق پیدا کرسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جن ریاستوں میں اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں، وہاں غلط اطلاعات اور تخریبی مہم شروع کی جاسکتی ہے۔ مودی حکومت ذات پات اور مذہبی مسائل کو اچھالے گی۔ ہمیں اس صورتحال کا اندازہ کرتے ہوئے مودی حکومت کی حکمت عملی کو ناکام بنانا ہوگا۔ راہول گاندھی نے کہا کہ کانگریس نے مودی حکومت کے مخالف غریب ایجنڈے اور جھوٹے وعدوں کو کامیابی کے ساتھ بے نقاب کیا ہے۔ انہوں نے پارٹی قائدین سے کہا کہ وہ تمام محاذوں پر مودی حکومت کی ناکامیوں کو اسی طرح بے نقاب کرتے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دلتوں پر مظالم کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔ آدی واسیوں کے حقوق سلب کیئے جارہے ہیں۔ صرف منتخبہ کارپوریٹ گھرانوں کو فائدہ پہنچایا جارہا ہے۔ عام آدمی ان فوائد سے محروم ہے۔ ایسے نوجوان جو تعلیم یافتہ ہیں، اس وقت بے روزگاری کا سامنا کررہے ہیں۔ بینکوں سے قرضوں کی عدم فراہمی کے باعث چھوٹے تاجرین متاثر ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 20 ماہ میں برآمدات میں منفی رجحان دیکھا گیا۔ راہول گاندھی نے کہا کہ کسانوں کی خودکشی اور زرعی شعبہ میں بے چینی اس حد تک پہنچ گئی ہے کہ حکومت اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے اعداد و شمار کا سہارا لے رہی ہے۔ حالانکہ ان اعداد و شمار کے بارے میں بھی شبہات پائے جاتے ہیں۔ بی جے پی زیر اقدامات ریاستوں میں پارلیمنٹ میں منظورہ قوانین کو نظرانداز کیا جارہا ہے۔ انہوں نے اسے بھی ایک تکلیف دہ رجحان قرار دیا۔ مودی حکومت نریگا کے تحت غریب افراد کو روزگار فراہم نہیں کررہی ہے۔ اسی طرح پاکستان اور جموں و کشمیر کے مسئلہ پر بھی حکومت کا لائحہ عمل غیر واضح ہے۔

TOPPOPULARRECENT