Sunday , August 20 2017
Home / دنیا / مودی حکومت نوکرشاہی اور سیاست کے بھنور میں پھنسی ہے : رپورٹ

مودی حکومت نوکرشاہی اور سیاست کے بھنور میں پھنسی ہے : رپورٹ

ملک کے ہر شعبہ میں ’’جوش و خروش‘‘ نہیںبلکہ ’’احتیاط‘‘ سے کام لیا جارہا ہے، معیشت کے استحکام کی وجہ حکومت کی پالیسیاں نہیں بلکہ عالمی سطح پر تیل کی قیمتوں میں کمی ہے

واشنگٹن ۔ 14 اگست (سیاست ڈاٹ کام) امریکی اعلیٰ سطحی تھنک ٹینک کی جانب سے ہندوستان کی مودی حکومت کے بارے میں جن آراء کا اظہار کیا گیا ہے وہ یقیناً تشویشناک ہیں۔ تھنک ٹینک کے مطابق گذشتہ سال برسراقتدار آنے والی مودی حکومت فی الحال نوکر شاہی اور سیاست کی آنکھ مچولی کے درمیان پھنسی ہوئی ہے جبکہ عوام نے تبدیلی کی لہر لانے اور کانگریس کو سبق سکھانے بی جے پی کو واضح اکثریت سے کامیاب کیا۔ دریں اثناء واشنگٹن کی ہڈسن انسٹیٹیوٹ نے اپنی ایک رپورٹ جس کا عنون ’’مودی : ون ایئرآن‘‘ کے عنوان کے تحت تحریر کیا ہے کہ نوجوان نسل کے ووٹرس مودی حکومت کو اقتدار دلانے کے ذمہ دار ہیں۔ نئی نسل کسی بھی کام کا عاجلانہ نتیجہ چاہتی ہے اور وہ یہ دیکھنا چاہتی تھی کہ مودی کو اگر وزیراعظم کا عہدہ دیا جائے تو ان کی کارکردگی کیسی ہوگی۔

رپورٹ میں مزید تحریر کرتے ہوئے کہا گیا ہیکہ ایک ایسی حکومت جو ملک میں تبدیلی اور اصلاحات کے وعدہ پر تشکیل دی گئی تھی، کس طرح سیاست اور نوکر شاہی کے بھنور میں پھنس کر رہ گئی۔ حکومت کے ہر شعبہ میں اب کام کاج کرنے کا جوش و خروش یا ولولہ نہیں پایا جاتا بلکہ ہر طرف لوگ (وزراء) محتاط نظر آرہے ہیں جیسے پتہ نہیں ان کا کونسا راز منظرعام پر آجائے گا۔ اب چاہے وہ معاشیات کا شعبہ ہو، دفاع کا ہو، صحت کا ہو، تجارت کا ہو یا سرمایہ کاری کا بلکہ تعلیم، توانائی اور لیبر کے شعبہ جات میں بھی ایک نامعلوم سی بے چینی پائی جاتی ہے۔ اس کے باوجود بھی نریندر مودی کو ہر قسم کی تائید حاصل ہے، خصوصی طور پر کارپوریٹ سیکٹر آج بھی پرامید ہے کہ نریندر مودی حکومت ملک میں زبردست تبدیلیاں لانے کی اہل ہے۔ کارپوریٹ سیکٹر کے علاوہ مودی کے دیگر حامی بھی اب اصلاحات اور تبدیلی کے نتائج جلد سے جلد اپنی آنکھوں سے دیکھنا چاہتے ہیں۔

آج مارکٹس کی حالت میں بہتری صرف اس لئے پیدا ہوئی ہے کہ انہیں بھی مثبت تبدیلیوں کی پوری پوری امید ہے اور معاشی فروغ بھی اسی امید پر منحصر ہے۔ رپورٹ میں البتہ یہ بھی لکھا گیا ہیکہ ہندوستان کی معیشت اگر مستحکم ہورہی ہے تو اس کی وجہ حکومت کی پالیسیاں اور ان پر عمل آوری نہیں بلکہ عالمی سطح پر معاشی شعبوں میں آئی زبردست تبدیلی ہے جیسے تیل کی قیمتوں میں کمی اور مارکٹ کی یہ امید کہ حالات میں بہتری واقع ہوگی۔ ہندوستان کو دفاعی شعبہ میں بھی زبردست چیلنجس کا سامنا ہے جس میں سب سے اہم بات یہ ہیکہ ہندوستان کو دفاعی شعبہ میں درکار ضروری ٹیکنالوجی اور سرمایہ کاری کا فقدان ہے اور اسی وجہ سے دفاعی شعبہ میں ہندوستان خودکفیل نہیں۔ آج مودی حکومت بھی اپنی پیشرو کانگریس کی طرح مختلف اسکینڈلس میں پھنسی ہوئی ہے۔ یہ تو اچھا ہے کہ اپوزیشن زیادہ مضبوط نہیں ورنہ اب تک نہ جانے کتنے وزراء مستعفی ہوچکے ہوتے۔

TOPPOPULARRECENT