Monday , June 26 2017
Home / ہندوستان / مودی حکومت کی پالیسیوں سے پسماندہ مسلمانوں کو فائدہ

مودی حکومت کی پالیسیوں سے پسماندہ مسلمانوں کو فائدہ

غریب طبقات بہبودی اسکیمات سے استفادہ میں ناکام : نقوی
نئی دہلی۔ 9 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے مسلم قائدین نے اقلیتی پسماندہ طبقات پر زور دیا ہے کہ وہ نریندر مودی کی ’’موافق غریب‘‘ پالیسیوں کو تسلیم کریں۔ اقلیتوں تک رسائی کیلئے وزیراعظم نریندر مودی کی اپیل کے بعد یہ اجلاس منعقد کیا گیا تھا۔ وزیر اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے پسماندہ اور دیگر مسلم طبقات میں تفریق کرتے ہوئے کہا کہ غریب مسلمان ، اقلیتوں کے لئے بہبودی اسکیمات سے استفادہ میں ناکام رہے ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ مودی کی موافق غریب پالیسیوں سے ان کی زندگیوں میں بہتری آئے گی۔ نریندر مودی نے بھوبنیشور میں پارٹی قومی عاملہ اجلاس میں قائدین سے کہا تھا کہ وہ پسماندہ مسلمانوں تک رسائی حاصل کریں اور حکومت کے اس بل کا انہیں بھی فائدہ ہونا چاہئے جس میں او بی سی کمیشن کو دستوری موقف دینے کی خواہش کی گئی ہے۔ یہ بل اپوزیشن جماعتوں کی مخالفت کے سبب راجیہ سبھا میں زیرالتواء ہے۔ مختار عباس نقوی نے مختلف ریاستوں سے آئے مسلم نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس، ٹی ایم سی، جنتادل (یو) جیسی جماعتیں مسلمانوں کی تائید کے ذریعہ اقتدار پر آئی ہیں لیکن ان جماعتوں نے اس بل کو روکے رکھا ہے جس کے ذریعہ اقلیتوں کے پسماندہ طبقات کو فائدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں میں 84 طبقات ہیں جن میں قریشی، مومن ، بنکر شامل ہیں جنہیں حکومت کے اقدامات کی وجہ سے فائدہ ہوگا۔بہار بی جے پی لیڈر اور سابق رکن پارلیمنٹ صابر علی نے اس اجلاس کا انعقاد کیا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT